گاڑیاں انتہائی سستی ، 660سی سی سے لے کر 1800سی سی گاڑیوں کی قیمتوں میں بڑی کمی کا اعلان کر دیا گیا

اسلام آباد : حکومت کی جانب سے ٹیکس میں کمی کے بعد 660 سی سی سے لے کر 1800 سی سی تک کی گاڑیوں کی قیمتوں میں بڑی کمی، گاڑیوں کی نئی قیمتوں کا اعلان کر دیا گیا- تفصیلات کے مطابق ٹیکس کم ہونے سے گاڑیوں کی قیمتیں کم ہوگئیں ہیں جس کے بعد ٓٹو مینوفیکچرز نے گاڑیوںکی نئی قیمتوں کا اعلان کردیا ہے۔ 660 سی سی گاڑی 85 ہزار روپے سستی

ہونے کے بعد11 لاکھ 13 ہزار روپے کی ہوگئی ہیں ۔ایک ہزار سی سی کی قیمت 15 لاکھ 30 ہزار روپے مقرر کردی گئی ہے، ایک ہزار سی سی ایک لاکھ 10 ہزار روپے سستی ہوئی ہے۔ ٹیکسوں میں کمی کے بعد 1300 سی سی گاڑی 48 ہزار روپے سستی ہوگئی جس کے بعد 1300 سی سی کی گاڑی کی قیمت 19 لاکھ 72 ہزار پر آگئی ہیں ۔ اسی طرح 1500 سی سی ایک لاکھ چھ ہزار روپے سستی ہونے سے 1500 سی سی کی گاڑی کی قیمت 33 لاکھ 74 ہزار روپے مقرر کردی گئی ہے۔1800 سی سی کی گاڑی ایک لاکھ 15 ہزار روپے سستی ہوئی ہے، 1800 سی سی کی گاڑی کی قیمت 38 لاکھ 64 ہزار روپے مقررکردی گئی ہے ۔ واضح رہے کہ گزشتہ دنوں وفاقی وزیر اطلاعات کو نشریات فواد چوہدری کے ہمراہ پریس کانفرنس کرتے ہوئے خسرو بختیار نے کہا کہ پچھلے سال 4 لاکھ 15 ہزار گاڑیاں بنیں، ہم چاہتے ہیں کہ طلب بڑھائیں کیونکہ یہ سب سے بڑا سیکٹر ہے، گاڑیوں کی قیمتیں کم ہوتی ہیں تو طلب بڑھتی ہے، تو ہم نے گاڑیوں پر ڈیوٹی کم کردی ہے، جس کے بعد 660 سی سی کی گاڑیوں کی قیمت ایک لاکھ 50 ہزار روپے تک کم ہوں گی. انہوں نے کہا کہ کلٹس، سٹی اور ٹویوٹا گاڑیوں کی قیمتیں کم ہوں گی اور طلب میں اضافہ ہوگا جبکہ طلب بڑھنے سے 3 لاکھ نئی نوکریاں پیدا ہوں گی انہوں نے کہا کہ اس سال گاڑیوں اور موٹر سائیکلوں کو ملا کر 3 لاکھ 75 ہزار نوکریاں پیدا ہوں گی، ہم نے گاڑیوں کی اپ فرنٹ پیمنٹ 20 فیصد کردی ہے، آئندہ سال اس کی اقساط کو بھی کم کر دیں گے. وفاقی وزیر نے کہا کہ یہ بہت بڑا سیکٹر ہے، اس کو ہمیں برآمد کی طرف لے کر جانا ہے، نئی پالیسی جو آرہی وہ برآمد اور مینوفیکچرنگ کی بنیاد پر بنائی گئی ہے انہوں نے کہا کہ ‘ہماری توجہ یہ ہے کہ ہماری گاڑیوں کو بہتر کیا جائے، پاکستان میں سب گاڑیوں کی قیمتیں کم ہوگئی ہیں، چھوٹی گاڑی پر میری گاڑی اسکیم کے تحت ہماری خاص توجہ ہے، ہمارا ہدف ہے کہ پاکستان میں 5 لاکھ گاڑیاں بنیں گی، یہ بل کل کابینہ میں منظور ہوا ہے اور کوشش ہے کہ آر او آجائے تو ہم نئی قیمتوں کا اطلاق کریں گے، جبکہ ہم آٹو سیکٹر میں درآمد کی بھی اجازت دیں گے۔

Sharing is caring!

Categories

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *