دو چیزیں انسان کی پہچان بنتی ہیں؟ برا وقت وہ شفاف آئینہ ہے جو؟

علم کا ایک قطرہ جہالت کے سمندر سے بہتر ہے اور عمل کا ایک قطرہ علم کے سمندر سے افضل ہے۔ خوبصورت عمل انسان کی شخصیت بدل دیتا ہے اور خوبصورت اخلاق انسان کی زندگی۔ خلوص کی کو ئی خاص زبان نہیں ہو تی یہ دل میں محسوس ہو تا ہے اور آنکھوں سے جھلکتا ہے۔ والدین کی دعائیں

تسبیح کے دانوں کی طرح ہو تی ہیں ، جو اولاد کے حق میں ہر وقت پر پل تسبیح کے دانوں کی طرح گرتی رہتی ہیں۔ خوش اخلاقی ایک ایسی خوشبو ہے جو میلوں دور سے محسوس کی جا سکتی ہے۔ کسی دوسرے کی خاطر اپنی خوشی قربان کر دینا، یہ بھی انسانیت کی معراج ہے۔ کبھی ہمت مت ہارو کیونکہ پہاڑوں سے نکلنے والی لہروں نے آج تک کسی سے نہیں پو چھا کہ سمندر کتنا دور ہے۔ طا لب دنیا کی مثال سمندر کا پانی پینے والے کی طرح ہے جس قدر پانی پیتا ہے پیاس زیادہ لگتی ہے۔ رب کو عبادت سے اور مخلوق کو اپنے اخلاق سے راضی کر و دنیا اور آخرت میں خوش رہو گے۔ رشتے موتیوں جیسے ہو تے ہیں اگر گِر بھی جا ئیں، تو ذرا سا جھک کر اُٹھا لینے چاہییں۔ کسی کو کمزور اور حقیر نہ سمجھو کیونکہ راستے میں چھوٹا سا پتھر بھی آپ کو منہ کے بل گرا سکتا ہے۔ اپنی غلطی کا اعتراف کر لینا ایک خصوصیت

ہے اس سے نفس میں عاجزی پروان چڑھتی ہے اور تکبر کمزور ہو تا ہے۔ غلطی ماننے اور گ ن ا ہ چھوڑنے میں کبھی دیر مت کرو کیونکہ سفر جتنا طویل ہو تا جا ئے گا واپسی اتنی ہی دشوار ی ہو گی۔ دنیا کا سب سے خوبصورت پودا محبت کا ہوتا ہے۔ جو زمین میں نہیں۔ بلکہ دلوں میں اُگتا ہے۔ جو ظلم کے ذریعے عزت چاہتا ہے اللہ اسے انصاف کے ذریعے ذلیل کر تا ہے۔ وہ ساتویں آسمان پر رہنے والا رب ہم زمین پر بسنے والوں کے درد ہمارے ساتھ جینے والے انسانوں سے بہتر جا نتا ہے۔ اللہ کا شکر ادا کرو۔ یہ نہ سوچو اللہ تمہاری دعا کو فوراً قبول کیوں نہیں کر تا۔ بلکہ یہ شکر کرو کہ وہ تمہارے گ ن ا ہ وں کی س ز ا فوراً نہیں دیتا۔ نادان ڈھول کی مانند ہو تا ہے بلند آواز ہو تا ہے مگر اندر سے خالی ہوتا ہے۔ برا وقت وہ شفاف آئینہ ہے جو بہت سے چہرے صاف کر دیتا ہے اور اچھا وقت ایسا بادل جو تیز دھوپ کو بھی روک لیتا ہے۔ اچھی سوچ اور اچھی نیت والوں کو سکون ڈھونڈنا نہیں پڑتا ان کے دل ہمیشہ نکھری ہوئی صبح کی طرح اُجلے اور پُر سکون رہتے ہیں۔ دو چیزیں انسان کی پہچان بنتی ہیں۔ اس وقت کیا گیا صبر جب اس کے پاس کچھ نہ ہو۔ دوسرا۔ اس کا رویہ جب اس کے پاس سب کچھ ہو۔ تو ہمیں ان باتوں کا خیال رکھنا چاہیے۔ ان باتوں سے کچھ نہ کچھ سیکھنا چاہیے

Sharing is caring!

Categories

Comments are closed.