داڑھ کے درد کا فوری اور مستقل علاج۔

اپنے گ ن ا ہ وں کی بخشش کے لیے اور اللہ کی خوشنودی حاصل کرنے کے لیے ہمیں درودِ پاک کا ورد کر نا چاہیے تا کہ ہماری جو زندگی ہے وہ پاک ہو سکے دن کے کسی بھی اوقات میں بڑی آسانی سے کر سکتا ہے اور یہ وظیفہ میرا آزمودہ ہے اور اس وظیفہ کو کوئی بھی مرد عورت دن کے کسی بھی حصے

میں کر سکتا ہے اور انشاء اللہ اس وظیفہ کو کرنے سے داڑھ درد سے فوری نجات مل جا ئے گی اور وظیفہ کو جاننے کے لیے ان باتوں کو بہت ہی زیادہ غور سے سنیے گا تا کہ آپ کو اس وظیفے کے متعلق بہت کچھ معلوم ہو سکے۔ میں آپ کو جو بھی وظائف بتاتا ہوں۔ وہ میری روزمرہ زندگی کے معمول کا حصہ ہے اور یہ وظائف ایک بار نہیں دو بار نہیں بے شمار مر تبہ تجربات کی بناء پر ہو تے ہیں اس کے بعد ہی یہ میں وظائف آپ کی خدمت میں پیش کر تا ہوں تا کہ آپ سبھی لوگ اس سے فائدہ اُٹھا سکیں اور یہ میرے لیے اللہ کی خوشنودی کا سبب بن سکے اور آج جو میں آپ کو داڑھ کے درد کا وظیفہ بتا رہا ہوں یہ بہت ہی مجرب ہے میرے پا س جتنے بھی آج تک مریض آ ئے ہیں داڑھ درد کے لیے تو مجھے کوئی ایسا مریض یاد نہیں کہ جس کو اس وظیفہ کے ذریعے دم کیا ہو اور اس کو اللہ کی ذات نے شفاء نہ دی ہو اس وظیفہ کی بر کت سے اللہ کی ذات فوراً مریض کو شفاء عطا فر ما دیتی ہے۔ اور یہ وظیفہ آج میں آپ کی خدمت میں پیش کر

رہا ہوں تا کہ آپ لوگ بھی اس وظیفہ کے ذریعے فائدہ اُٹھا سکیں جس بھی شخص کے داڑھ کا درد ہو رہا ہو تو اس کا کوئی عزیز اس کو سامنے بٹھا کر اس وظیفہ کے ذریعے مریض کو دم کر سکتا ہے دم کا طریقہ یہ ہے کہ درد والی داڑھ پر مریض اپنی شہادت کی انگلی رکھے اور دل ہی دل میں بسم اللہ الر حمن الرحیم کا ورد کر تا رہے اس وظیفہ کے ذریعے کے جس شخص نے مریض کو دم کر نا ہے وہ اپنے سامنے ایک پیپر پر سیاہ ر نگ کی مارکر سے حروف ابجد الگ الگ لکھ لیں اب جس نے بھی مریض کو دم کر نا ہے وہ حروفِ ابجد کا پہلا حرف ا ہے۔ اس کے اوپر کیل کی نوک کو رکھیں اور تھوڑی سی بلند آواز کے ساتھ سورۃ فاتحہ کا ورد کر نا شروع کر دیں ایک بار سورۃ فاتحہ پڑھیں اور مریض کو دم کر دیں مریض کی داڑھ سے انگلی کو ہٹا کر اس سےپوچھیں کہ درد ختم ہوا ہے یانہیں ہو اگر درد ختم نہیں ہو اتو کم از کم پہلی ہی بار دم کرنے سے پچاس فیصد ضرور کم ہو چکا ہو گا۔ اسی طرح ا کے بعد باقیوں پر پین کی نوک رکھیں

Sharing is caring!

Categories

Comments are closed.