جاپانی کہاوت ہے کہ مرد جس عور ت سے عشق کر تا ہے

محبت میں شرک کی کئی قسمیں ہیں۔ ایک وقت میں آپ دو لوگوں سے محبت نہیں رکھ سکتے۔ مثلاً محبوب سے بھی اور خود سے بھی عزت عورت کی ہو یا مرد کی سب برابر ہے عورت سے زیادہ مرد کو اپنی عزت کی پرواہ کر نی چاہیے کیونکہ اسے معاشرے میں عورت سے زیادہ گھو منا اور ملنا ملا نا ہو تا ہے۔ عروج

کے وقت انسان کی بے وقو فیاں بھی دانشمندی بن جا تی ہیں جب کہ زوال کے وقت دانش مندی بھی بے وقو فیاں سمجھی جا تی ہیں معافی سے کچھ نہیں ہو تا کچھ با تیں دل کو لگ جا تی ہیں جو بھو لائی نہیں جا تی۔ جہاں عزتِ نس کی م و ت ہو رہی ہو۔ وہاں سے ہجرت کر جا نا بہتر ہو تا ہے۔ ہم لوگ بھی کتنے عجیب ہیں نا نشانیاں محفوظ رکھتے ہیں اور لوگوں کو کھو دیتے ہیں محبت پہلی، دوسری، تیسری نہیں ہو تی۔ محبت تو وہ ہو تی ہے جس کے بعد محبت نہ ہو۔ مرد جس عورت سے عشق کر تا ہے اسے بھی چھوڑ کر چلا جا تا ہے جب عورت مرد کو عزت اور توجہ نہیں دیتی۔ کچھ لوگ ہمیں شدت سے اپنی چاہت کا احساس دلاتے ہیں کہ ہم دنیا کی تمام چاہتوں سے کنارہ کش ہو کر ایک بے انتہا چاہت کے احساس میں جینے لگتے ہیں۔ لیکن دراصل وہ لوگ اپنی تنہائی اور ضرورتوں کی تسکین کے لیے انتہائی توجہ کے متلاشی ہو تے ہیں۔ ہمارے معاشرے میں شادیاں کم اورتجارت زیادہ ہوتی ہے۔ المیہ یہ ہے کہ رنگت، شکل ، عقل ،ذات پات، پیسہ ، درجہ ،خاندان ، لباس اور طاقت کو اگنو ر کرکے محت تو کی جاسکتی ہے لیکن شادی نہیں ۔ لاحاصل عشق کو پانے کی آرزو کرنا، آندھیوں میں دیا جلانے جیسا ہے ۔ محبت

کرو! شرماؤ نہیں کیونکہ محبت کرنا فن ہے۔ اور تم ایک شاہکار ہو محبت یہ بھی نہیں کہتی کہ جب کوئی پوری طرح سے تمہارا ہوجائے تو تم اسے اپنی جاگیر سمجھ کرذلیل کرکے رکھ دو۔ دنیا کی ساری چیزیں ٹھوکر لگنےسے ٹوٹ جاتی ہیں، مگر صرف انسان وہ چیز ہے جو ٹھوکرلگنے کے بعد بنتا ہے۔ذہنی سکون تباہ کرنے والے بروقت کنارہ کرلینا ہی عقل مندی ہے۔ جس خاص کے لیے آپ خاص نہیں اسے عام کردیجیے۔ جس عورت میں یہ دونشانیاں ہیں تو سمجھ لینا کہ وہ بے وفا دار اور دھو کے باز ہے ۔ پہلی نشانی یہ ہے کہ اسے محبت کی نہیں بلکہ پیسوں کی لالچ ہوگی۔ دوسری نشانی ہےوہ آپ کو وقت بہت کم دے گی اور آپ کے وقت نہ دینے پر کبھی ناراض نہیں ہوگی۔ ۔ اپنی دوستی کور شتے داری میں تبدیل کردیں یقین کریں دونوں رشتوں کو آ گ لگ جائے گی۔یہ خود کو کتنا مکمل کر دینے والا احساس ہے کہ کوئی اس دنیا میں ایسا بھی ہے ، جو اپنی تنہائی میں آپ کو سوچتا ہے ، آپ کی فکر کرتا ہے ، آپ کی یاد اس کے ہونٹوں پر ایک میٹھی سی مسکان بکھیر دیتی ہے۔ دل میں جو لوگ ہیں اک ترتیب میں، سب سے پہلے ، سب سے آخر میں بھلانے کےلیے رکھے ہیں۔

Sharing is caring!

Categories

Comments are closed.