دودھ پینے کے بارے میں آپ کے تما م سوالوں کے جواب

دودھ کے فائدے کیا ہیں؟ اور کوئی نقصان ہیں تو کیا ہیں؟ اور اس کی غذائیت کیا ہیں؟ دودھ کاپکا ہوا فائدہ ہے یا کچے دودھ کا فائد ہ ہے؟ دووھ کو گرم پینا چاہیے ؟ یا ٹھنڈا پینا چاہیے؟ گائے کا دودھ اچھا ہے یا بکری کا ؟ دودھ کےساتھ مچھلی کھالی جائے تو اس سے برص کی بیماری ہوتی ہے۔ یا نہیں ؟

سب سےپہلے دودھ کے فائدے کیا ہیں۔ دودھ ایک ایسی غذا ہے جو ایک مکمل غذ ا ہے۔ اس طرح اندازہ لگا لیں۔ جتنے بھی میملز ہیں۔ گائے کےبچے ہیں۔ بکریاں ہیں۔ یہ ان کی جو پوری پرورش ہوتی ہے۔ وہ صرف اور صرف ایک غذا پر ہوتی ہے۔ وہ ہے دودھ ۔ وہی دودھ ہے جو انسا ن کے بچوں کو سب سے چھوٹے بچوں لے گر چھ مہینے تک صرف دودھ پر گزارا ہوتا ہے۔ اور کہاں سے کہاں پہنچ جاتے ہیں۔ اس سے اس کی افادیت کا اندازہ ہوتاہے۔ دودھ میں کیا کیا چیزیں ہیں جو ہمارے لیے بہت مفید ہیں۔ دودھ کا شمار ہائی پروٹین میں ہوتاہے۔ ہر ایک کپ میں تقریباً آٹھ گرام پروٹین ہوتے ہیں۔ نہ صرف پروٹین ہوتے ہیں۔ اس میں ضروری امائنوایسڈ ہوتےہیں۔ وہ ہمارے جسم کے لیے بہت ضروری ہیں۔ ہمارا جسم وہ ضروری امائنو ایسڈ نہیں بنا پاتا۔ وہ دودھ کے اندر سب کے سب نو ضروری امائنوایسڈ موجود ہوتے ہیں۔ دودھ کے جو پروٹین ہوتے ہیں۔ وہ پورے جسم کے فنکشن کےلیے بہت ضروری ہوتے ہیں۔ ہمارے جو مسلز ہیں پٹھے ہیں۔ ان کی گروتھ کےلیے بہت اچھا ہوتا ہے۔ اس کے علاوہ دودھ میں کیلشیم کی بھرپور مقدار ہوتی ہے۔ وٹامن ڈی ہوتی ہے۔ وٹامن بی تھامین اس میں بہت زیادہ مقدار میں ہوتا ہے۔ اس کے اندر بی بارہ ہے۔ اسکے علاوہ وٹامن اے ہے۔ اس کے علاوہ اس میں میگنیزیم ، سیلینیم اور دوسرے بہت سارے معدنیا ت موجود ہیں۔ اور دودھ کے اندر ان سیچوریٹڈڈفیٹ بھی موجود ہوتے ہیں۔ جو اومیگاتھری ہوتے ہیں۔ یہ ہمارے جسم میں انفلا میٹری کے لیے بہت فائدہ مند ہیں۔ اور یہ اینٹی آکسیڈینٹ ہیں۔ جتنی بھی گائیں ہیں۔ جو کہ گھا س کھاتی ہیں۔ ان کے دودھ میں اومیگا تھری فیٹی ایسڈ

جتنے بھی ہیں۔ اور اینٹی آکسیڈینٹس ہیں۔ وہ زیادہ ہوتے ہیں۔ ان کی غذائیت زیادہ ہوتی ہے۔ ہڈیوں اور دانتوں کی مضبوطی کے لیے بہت ضروری ہوتی ہے۔ اس کے اندر کچھ نقصان ہیں تو وہ کیا ہیں؟ سب سے بڑی بات یہ ہے کہ کچھ لوگوں کے اندر لیکٹوز انٹول رینس ہوجاتی ہے۔ اس کا کیا مطلب ہے؟ دودھ کے اندر جو شوگر ہوتی ہے۔ وہ لیکٹوز ہوتی ہے۔جن لوگوں کو اینزائمز کی کمی ہوتی ہے۔ جو اس شوگر کو ہضم کرتا ہے۔ ان کو لیکٹوز انٹول رینس ہوجاتی ہے۔ وہ دودھ پینےسے ان کا پیٹ ایک دم سے پھولنے لگتا ہے۔ گیس بہت زیادہ ہوجاتی ہے۔ اور ان کو دست آنا شروع ہوجاتے ہیں۔ دوسرا نقصان جو ہے کچھ لوگوں کو پروٹین سے الرجی ہوتی ہے۔ظاہر ی بات ہے جن کو الرجی ہے۔ ان کو اس سے پرہیز کرنا چا ہیے ۔ تیسرا نقصان یہ ہے کہ جن مویشیوں کو اینٹی بائیو ٹک دی جاتی ہیں۔ ان کو بہت سے سٹیرائیڈ ہارمون دیے جاتےہیں۔ ان کو جو بھی انجیکشن دیے جاتے ہیں ۔ وہ پھر ہمیں بھی ملنےلگتاہے۔ وہ دودھ میں آجاتا ہے۔ تو وہ نقصان ان کو نہیں ہے اس دودھ کےاندر جو گروتھ ہارمون ہے۔ سٹیر ائیڈ ز ہیں اینٹی بائیوٹکس ہیں۔ ان کے نقصانات ہیں۔ اب بات کرتے ہیں کہ دودھ گرم پینا چاہیے یا ٹھنڈا پینا چاہیے ۔ میڈیکل سے ثابت نہیں ہے۔ مگر ہمارے تجویز کے مطابق دودھ کو گرم پینا چاہیے۔جن لوگوں کے جسم پر پہلے سے سفید دھبے ہیں۔جس کو لیکو ڈرما یا برص کہتے ہیں۔ اس کو دودھ پینے سے احتیاط کرنا چاہیے۔ ریسر چ سے یہ بات دیکھنے میں نہیں آئی کہ دودھ کو مچھلی کے ساتھ پینے سے برص ہوتی ہے۔ یا نہیں ۔ بلکہ یہ دیکھا گیا ہے کہ پوری دنیا میں جو بھی مچھلی اور دودھ ایک ساتھ لیتے ہیں۔ ان کو کوئی مسئلہ نہیں ہوتا۔

Sharing is caring!

Categories

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *