چہرے سے بلیک ہیڈز کا خاتمہ

بلیک ہیڈز سے نجات کے لئے گھریلو ٹوٹکے:عرق گلاب میں جو کا آٹا ملا کر پیسٹ بنا لیں ۔متاثرہ جگہوں پر لگائیں اور بیس منٹ کے بعد رگڑ کر اتار دیں۔ہلدی اور دارچینی کے پاؤڈر میں لیموں کے چند قطرے ملا کر پیسٹ بنا لیں اور بلیک ہیڈز پر لگائیں ۔دس منٹ بعد رگڑ کر اتار دیں۔جو کے آٹے میں چند قطرے لیموں،زیتون کا تیل

ملا کر لگائیں اور دس منٹ بعد اتار دیں۔یہ عمل ہفتے میں ایک بار کریں۔عرق گلاب میں بادام کو پیس کر ملائیں اور بیس منٹ بعد اتاردیں۔اکثر اوقات چہرے پر سیاہ تل بننا شروع ہو جاتے ہیں جو خوبصورتی کو متاثر کرنے کے ساتھ ساتھ پریشانی کا باعث بنتے ہیں ۔سیاہ تلوں کو ختم کرنے کے لیے ایلوویرا جیل اور ناریل کا تیل ایک چائے کا چمچ کسی برتن میں ڈال کر اچھی طرح مکس کرلیں اور پھر اسے تل پر لگا کر آدھا گھنٹہ چھوڑ دیں ۔ آدھے گھنٹے بعد تازہ پانی سے منہ دھو لیں ۔ مسلسل استعمال سے تل ختم ہو جائیں گے ۔چہرے کی جلد اور ناک پر بننے والے بلیک ہیڈز بھی چہرے کی خوبصورتی کو متاثر کرتے ہیں ۔ ان سے جان چھڑانے کا طریقہ یہ ہے کہ ایک کھانے کا چمچ لیموں کا عرق لے کر اس میں ایک چٹکی بورک پاؤڈر اور ایک چٹکی چینی ملا لیں اور کسی بوتل میں ڈال کر کچھ دن کے لئے چھوڑ دیں ۔ اسے چہرے کی چھائیوں اور بلیک ہیڈز پر لگائیں آپکے بلیک ہیڈز ختم ہو جائیں گے اور جلد نکھر جائے گی ۔چہرے سے داغ دھبے اور چھائیاں دور کرنے کے لیے لیموں اور چینی کا پیسٹ بنائیں اور چہرے پر لگا لیں اور کچھ دیر بعد ٹھنڈے پانی سے منہ دھو لیں ۔ کچھ روز لگاتار استعمال کرنے سے داغ اور چھائیاں دور ہوجائیں گی ۔چہرے کے کھلے مسامات اور اضافی چکنائی کو کنٹرول کرنے کے لیے چہرے پر کھیرے کا ماسک لگائیں ۔ پہلے اپنا چہرہ بیسن سے دھوئیں

اور خشک کرکے روئی کی مدد سے کھیرے کا رس سارے چہرے پر لگائیں ۔ آدھے گھنٹے بعد چہرے کو ٹھنڈے پانی سے دھو لیں ۔ یہ ماسک چکنی جلد کی حامل خواتین کےلئے بہت مفید ہے ۔ ایکنی اور پمپلزکے مسائل زیادہ تر نوجوان افرادمیں جنم لیتے ہیں ،خاص کر جب ان کی عمر 12 سال سے 24سال تک ہوتی ہے۔چہرے کی جلد پر ایکنی کی وجہ سے وائٹ ہیڈز، بلیک ہیڈز،پمپلز وغیر ہ بن جاتے ہیں،اس کے علاوہ جسم کے مختلف حصوں جیسے کہ چہرے،سینے، کندھے اور کمر پرریشیز پڑجاتے ہیں. جس سے جلد کی رنگت سرخی مائل ہو جاتی ہے۔اور اگر ان کا بروقت علاج نہ کیا جائے تو یہ انسان میں چہرے کی خرابی کی ساتھ ساتھ خوداعتمادی کی کمی اور ذہنی تناؤ کا باعث بنتے ہیں۔چہرے پر ایکنی کی سب سے بڑی وجہ جلد میں موجود ٹاکسن کا اخراج نہ ہوپانا ہے۔ٹاکسن کی ضرورت سے زیادہ مقدار جلد کے مساموں میں پھنس جاتی ہے اوران کو بند کر دیتی ہے جس سے چہرے کے سیلز کوآکسیجن فراہم نہیں ہو پاتی اور وہ ٹھیک سے سانس نہیں لے پاتے اور ایکنی کی شکایات سامنے آتی ہیں۔اس کے علاوہ وائٹ اور بلیک ہیڈزبننے کی سب سے اہم وجہ معدے کا ٹھیک سے کام نہ کرنا بھی ہے، بے وقت اور ضرورت سے زیادہ کھانے سے بھی ہاضمہ خراب ہو جاتا ہے اور معدہ کی بیماریاں سامنے آتی ہیں جوایکنی کی وجہ بنتی ہے۔اس کے علاوہ خوراک میں آئل ،فیٹس،سٹارچ اور چینی کا زیادہ استعما ل بھی ایکنی کی شکایات کو جنم دیتا ہے،لیکن گبھرانے والی کوئی بات نہیں ہے وائٹ اور بلیک ہیڈز کوبڑی آسانی کے ساتھ ختم کیا جا سکتا ہے۔گھر پر بڑی آسانی سے تیار ہونے والے ایک زبردست نسخہ کے ذریعے آپ خون میں موجود گندگی کو صا ف کر سکتے ہیں اور چہرے سے کیل مہاسے اور داغ دھبے

ہمیشہ کے لئے ختم کر سکتے ہیں۔نسخہ کچھ یوں ہے۔اجزاء:ہرا دھنیا ایک گٹھی،ہلدی ایک چٹکی۔ترکیب اور طریقہ استعمال:ہرے دھنیے میں تھوڑا سا پانی ملا کر اسے گرائنڈ کر لیں لیکن زیادہ گرائنڈ مت کریں۔اب ایک چھاننی لے کر اسے کسی برتن کے اوپر رکھیں اور اس پیسٹ کوچھاننی میں ڈال کر چمچ سے دبائیں تا کہ گودا چھاننی میں رہ جائے اور پانی نیچے برتن میں چلا جائے ۔اب اس پانی میں ایک چٹکی ہلدی ڈال کر اچھی طرح مکس کر لیں اوراس مکسچر کو کسی ڈھکن بند بوتل میں ڈال کر فریج میں رکھ لیں۔ اس پانی کو روزانہ سونے سے پہلے روئی کی مدد سے چہرے پر لگائیں اورصبح اٹھ کر چہرے کوتازہ پانی سے اچھی طرح دھو لیں۔ اس کا استعما ل لگاتار ایک ہفتہ تک کریں، انشاء اللہ بلیک اور وائٹ ہیڈز کامکمل طور پر خاتمہ ہو جائے گا۔اس نسخہ میں استعمال ہونے والے اجزاء میں ہلدی ایک اینٹی آکسیڈنٹ ایجنٹ ہے جو چہرے کے سیلز کو مردہ ہونے سے روکتی ہے،جلد کو ایکس فولی ایٹ کرتی ہے اور جلد کی خدوخال کو بہتر بناتی ہے۔چہرے کی جلد میں ہونے والی سوزش کو ختم کرتی ہے۔ ایکنی اورداغ دھبوں سے نجات دلاتی ہے،چہرے کی پگمینٹیشن کو کم کرتی ہے اورچھائیوں کو دور کرتی ہے اس کے علاوہ ہرے دھنیے میں پروٹین، فیٹس،کاربوہائیڈریٹس ،وٹامن سی اور آئرن موجود ہوتا ہے۔اس کو سلاد کے طور پر کھانے سے جسم کی تمام ترغذائی ضروریات پوری ہوجاتی ہیں اور اس کا پیسٹ چہرے پر لگانے سے چہرے پر موجود پمپلز، بلیک ہیڈز اور خشک جلد کے تمام تر مسائل ختم ہو جاتے ہیں۔لہسن خون کو صاف کرنے کی خصوصیت رکھتا ہے ۔ اس لیے لہسن کا استعمال خون میں سے گندے مادیوں کو ختم کر دیتا ہے جس سے ایکنی اور بلیک اور وائٹ ہیڈز کی شکایات دورہو جاتی ہیں۔ روزانہ کسی بھی وقت دو سے تین لہسن کے جوے کھائیں اور لگاتار ایک ماہ تک ان کا استعمال کریں کیل مہاسے اور داغ دھبے مکمل طور پر ختم ہو جائے گے۔اس کے علاوہ آپ لہسن کا پیسٹ بنا کر بھی چہرے کے داغ دھبوں پر لگا سکتے ہیں لیکن ایسے افراد جو حساس جلد کے مالک ہیں وہ لہسن کے پیسٹ میں ایک چائے کا چمچ دہی بھی شامل کر سکتے ہیں۔اللہ ہم سب کا حامی وناصر ہو۔آمین

Sharing is caring!

Categories

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *