غصہ بھگانے کا نبوی نسخہ وظیفہ ایک منٹ کے اندر اس کا غصہ ٹھنڈا

غصہ ایک ایسا جذبہ ہے جو ہر انسان میں فطرتاً پایا جاتا ہے۔ یہ ایک ایسی جذباتی کیفیت یا حالت کا نام ہے جس کی شدت بدلتی رہتی ہے۔ یعنی انسان کو مختلف حالات اور اوقات میں غصہ بھی مختلف نوعیت کا آتا ہے۔ اکثر شدید غصے کے باعث لوگوں کو بھیانک نتائج بھگتنا پڑتے ہیں۔ لہٰذا غصے پر قابو پانے کے

گر سیکھنا ہر ایک کےلیے اہم ہے۔ ماہرِ نفسیات کا ماننا ہے کہ اگر انسان شعوری کوشش کرے تو وہ اپنے غصیلے پن پر وقت کے ساتھ قابو پاسکتا ہے۔ یعنی اسے غصہ تو آئے گا مگر اب وہ اپنے غصے کا باس ہوگا نہ کہ خود اس کا غلام بن جائے۔غصے کی کئی وجوہات ہیں۔ کچھ لوگوں میں یہ موروثی ہوتا ہے، جبکہ کچھ گھرانوں میں لوگ بات بے بات غصہ کرتے ہیں اور وہاں پلنے والے بچے یہی سیکھتے ہیں۔ محققین کا کہنا ہے کہ نیند کی کمی، بھوک کی شدت اور تھکاوٹ بھی انسانی جذبات پر اثرانداز ہوتی ہے اور ایسا شخص آسانی سے چڑچڑے پن کا شکار ہوکر معمولی باتوں پر مشتعل ہوجاتا ہے۔ غصہ انسانی صحت پر برے اثرات ڈالتا ہے، کیونکہ غصے میں انسانی جسم ایسے ہارمونز خارج کرتا ہے جو اسے اس حالت سے نمٹنے میں مددگار ہوتے ہیں لیکن اگر یہ ہارمونز کثرت سے یا باقاعدگی سے خارج ہوں تو انسانی جسم مختلف اقسام کی بیماریوں میں مبتلا ہوجاتا ہے جن میں سر اور پیٹ کا درد، نیند نہ آنا، بلڈ پریشر کا بڑھنا، ڈپریشن، بےچینی، ہارٹ اٹیک

اور فالج جیسے امراض شامل ہیں۔ ان امراض سے بچنے کےلیے ضروری ہے کہ انسان اپنے غصے کو قابو میں رکھنا سیکھ لے تاکہ وہ ایک صحت مند اور بامقصد زندگی گزارنے کے قابل ہو۔ غصہ نہ صرف صحت کےلیے مضر ہے بلکہ اس کی وجہ سے اکثر آپس کے تعلقات بھی داؤ پر لگ جاتے ہیں۔ گھروں کا ماحول مکدر رہتا ہے۔ ہمارے ملک میں طلاق کی ایک اہم وجہ بھی غصہ ہی بتایا جاتا ہے۔ غصیلے لوگوں کو کوئی اپنا دوست بنانا پسند نہیں کرتا اور ایسے لوگ تنہا رہ جاتے ہیں۔ اس کے علاوہ انسان غصے میں خود کو اور دوسروں کو شدید نقصان پہنچا بیٹھتا ہے، نتیجتاً یا تو ج یل جا پہنچتا ہے یا اپنی اور دوسروں کی زندگی سے ہاتھ دھو بیٹھتا ہے۔سول اللہ ﷺ کے پاس دو آدمی جھگڑنے لگے سخت طیش میں ایک دوسرے کو گالیاں بک رہا تھا اور غصے سے اس کا چہرہ سرخ ہوگیا تھا یہ دیکھ کر نبی کریمﷺ نے ارشاد فرمایا میں ایک ایسا کلمہ جانتا ہوں اگر یہ شخص وہ کہہ لے تو اس کا غصہ دور ہوجائیگا اور وہ ہے اعوذ باللہ من الشیطان الرحیم ترجمہ:میں شیطان مردود سے اللہ کی پناہ میں آتا ہوں۔

Sharing is caring!

Categories

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *