گرمی کا شدید کا ٹوڑ ، پیشاب کی جلن، معدے اور جگر کی گرمی کا خاتمہ

آج شکر اور تخم ملنگا کا ٹھنڈا شربت بنانا سکھائیں گے ۔ جس میں گرمی کی شدت کا توڑ چھپا ہے۔ اسے استعمال کرنے سے جگر، معدے اور مثانہ کی گرمی کا خاتمہ آتا ہے۔ جن لوگوں کو پیشاب جل کرآتا ہے۔ تو اس شربت کو استعمال کرنا شروع کردیں۔ انشاءاللہ! پیشاب کی جلن ختم ہوجائے گی۔ پیا س کی شدت کو کم کرتا

ہے۔جسم ، دل اور دماغ کو ٹھنڈ ک دیتا ہے۔ اس شربت کو کیسے تیار کرنا ہے؟ وہ آپ کو بتا تے ہیں۔ اس کو بنانے کےلیے شکر کی ضرورت پڑے گی۔ اس کے علاوہ تخم ملنگا کی ضرور ت پڑے گی۔ تخم ملنگا کو کم ازکم بیس سے پچیس منٹ پانی میں بھگو لینا ہے۔ تاکہ تخم ملنگا اچھی طرح سے پھول جائیں۔ اس کے علاوہ ہمیں چاروں مغز کی بھی ضرورت ہوگی۔ یہ چاروں چیزیں آپ کو پنسار سے باآسانی سے مل جائیں گے ۔ اس کے علاوہ آئس کیوب بھی چاہیے ہوگے ۔ کیونکہ یہ شربت جتنی اچھی طرح سے ٹھنڈا ہوگا۔ اتنا ہی زیادہ مزہ دینے والا ہے۔ ہم دو گلاس شربت بنانا سکھائیں گے ۔ اس کے لیے پانی میں چھ کھانے کے چمچ شکر کے ڈال دیں۔ شکر تو گنے سے تیار ہوتا ہے۔ شکر کو پروسیس نہیں کیا جاتا۔ اس لیے شکر سفید چینی کی نسبت بہت زیادہ ہیلتھی ہے۔ اور خاص کر گرمیوں کے موسم میں اس کا استعمال ضرور کرنا چاہیے۔ شکر پانی میں اچھی طرح حل ہوجاتی ہے۔ لیکن جو سفید چینی ہوتی ہے۔ وہ کافی وقت لیتی ہے۔ شکر جیسے ہی حل ہوجائے۔ تو آپ نے چھ کھانے کے چمچ تخم ملنگا کے ڈال دیں۔ ویسے تخم ملنگا بہت اچھی چیز ہے۔ تخم ملنگا میں کیلشیم ، آئرن او ر میگنیشیم کا سورس ہیں۔ ہر موسم

میں استعمال ہونا چاہیے۔ لیکن گرمیوں کے موسم میں اس کا استعمال ضرور کرنا چاہیے۔ اس کے بعد دو کھانے کے چمچ چاروں مغز کے ڈال دیں۔ چاروں مغز بھی بہت بہترین چیز ہے۔ ہر موسم میں استعمال ہونا چاہیے۔ لیکن گرمیوں کے موسم میں اس کا استعمال ضرور کرنا چاہیے۔ آخر میں برف کے ٹکڑے یعنی آئس کیوب ڈال دیں۔ ظاہر سی بات ہے شربت ہے تو ٹھنڈا ہی اچھا لگے گا۔ اور اب ہمارا شکر اور تخم ملنگا کا شربت تیار ہے۔ اب آخر میں ان تمام چیزوں کو اچھی طرح سے مکس کرلیں۔ اس شربت کو تیار کرنے کےلیے شکر کا استعمال کیا ہے۔ جیسا کہ آپ کو بتا چکے ہیں۔ یہ کافی ہیلتھی ہوتی ہے سفید چینی کی نسبت۔ شکر میں وٹامنز بھی موجود ہوتے ہیں۔ اور یہ کافی ہیلتھی رہتی ہے۔ اس کے استعمال سے آپ کو انرجی ملتی ہے۔ا ورا س کا ذائقہ بھی لا جواب ہوتا ہے۔ اسی طرح ہم نے تخم ملنگا کا استعمال کیا ہے۔ یہ بہت زیادہ ٹھنڈی ہوتی ہیں۔ اور جسم کی بے جا گرمی کا خاتمہ کرتی ہیں ۔ ایک کھانے کا چمچ تخم ملنگا آپ کا روزانہ کی ضرورت کا پندرہ فیصد کیلشیم اور دس فیصد میگنیشیم اور آئرن موجود ہوتا ہے۔ تخم ملنگا کے استعمال سے آپ کے جسم میں خ ون کی کمی نہیں ہوتی۔او ر وزن کم کرنے میں بھی تخم ملنگا مدد کرتے ہیں۔

Sharing is caring!

Categories

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *