اگر آپ بھی ٹھنڈا پانی پیتے ہیں تو یہ ضرور پڑھ لیجئے

سخت گرمی میں ٹھنڈا یخ پانی مل جائے تو یقینا اس سے بڑی نعمت اور کوئی نہیں لگتی۔ لیکن کیا آپ کو معلوم ہے کہ ٹھنڈا یخ پانی آپ کی صحت کے لیے کتنا مضرثابت ہو سکتا ہے؟ اس بات سے یقینا زیادہ لوگ واقف نہیں ہونگے۔ کیونکہ ٹھنڈا پانی کسی کو بھی برا نہیں لگتا ، یہی وجہ ہے کہ ہر کوئی اس کے نقصانات کو بالائے

طاق رکھ کے ٹھنڈا پانی اپنے روٹین میں شامل کیے ہوئے ہیں۔اگر آپ کبھی باہر کھانا کھانے جائیں تو کبھی بھی ٹھنڈے یخ پانی کا آرڈر نہیں کریں۔اس کے ساتھ ساتھ اپنے گھر میں بھی ٹھنڈے پانی کے بجائے گنگونے پانی پینے کو ترجیح دیں۔ٹھنڈا پانی کیوں نہیں پینا چاہیئے؟ ٹھنڈے یخ پانی سے آپ کے نظام ہاضمہ میں موجود خون کی شریانے کو سُکیڑ دیتا ہے جس سے نظام ہاضمہ میں موجود نمی کم ہوجاتی ہے اور یہ نظام ہاضمہ کے لیے ایک نقصان دہ بات ہے۔ ٹھنڈے یخ پانی سے آپ کے جسم میں موجود انرجی بنانے والے انزائمز بھی متاثر ہوتے ہیں، جب آپ کھانا کھا کے ٹھنڈا پیتے ہیں تو وہ انزائمز سست پڑ جاتے ہیں اور جسم میں موجود انرجی ماند پڑنے لگتی ہے۔ کھانا کھانے کے فوراً بعد ٹھنڈا پانی پینے سے آپ کا مدافعتی نظام کمزور ہوجاتا ہے۔ جس کے باعث انسان نزلے، زکام کا جلدی جلدی شکار ہوجاتے ہیں۔ ٹھنڈا پانی اور ٹھنڈے مشروبات کھانے کے فوراً پینا آپ کے لیے موٹاپے کا باعث بن سکتا ہے۔ کیونکہ انسانی جسم غیر ضروری فیٹ ہضم کرنے کی صلاحیت نہیں رکھتا ، لہذا کھانے کے بعد پینے والے ٹھنڈے مشروبات اور پانی موٹاپے کا باعث بنتے ہیں۔بعض لوگوں کا خیال ہوتا ہے کہ ٹھنڈا پانی وزن کم کرنے میں مددگار ثابت ہوتا ہے

اور کچھ لوگوں کا خیال ہے کہ ٹھنڈا پانی ہمارے جسم میں سے اضافی کیلوریز ختم ہوجاتی ہیں، لیکن ایسا درست نہیں ہے۔ ٹھنڈا یخ پانی انسانی صحت کے لیے نقصان دہ ہے اور اس کو ہمیں اپنے روٹین میں شامل نہیں کرنا چاہیئے۔اس کی با نسبت آپ گنگنے پانی کو اپنے روٹین میں شامل کریں تو زیادہ بہتر ہے۔ گنگنا پانی صحت کے ساتھ ساتھ وزن کم کرنے میں بہت مددگار ہوتاہے۔ٹھنڈا پانی استعمال کرنے والے افراد کی آواز وقت سے پہلے تبدیل ہوجاتی ہے اور ان کو گلے کے درد کی شکایت بھی رہتی ہے۔ٹھنڈا پانی استعمال کرنے سے معدے میں تیزابیت پیدا ہوتی ہے جس کے باعت استعمال کرنے والا شخص دیگر بیماریوں میں بھی متبلا ہوجاتا ہے۔ٹھنڈے پانی کا آنتوں سے گزرنے کا عمل نہایت کٹھن اور دشوار ہوتا ہے جس کے باعث اندر کی آنتیں سوکھ جاتی ہیں اور قبض کی شکایت پیدا ہوتی ہے۔ اس کے برعکس گرم پانی آنتوں کو تر رکھتا ہے۔ٹھنڈا پانی نظام ہاضمہ کی خرابی کا سب سے بڑا سبب ہے، اس کے استعمال سے معدے کے مسائل بڑھ جاتے ہیں جو نظام ہاضمہ کو بری طریقے سے متاثر کرتے ہیں۔ٹھنڈا پانی پینے سے جسم کا درجہ حرارت کم ہوتا ہے جس کے باعث کیلوریز ختم نہیں ہوتیں اور پھر انسان کا وزن بڑھ جاتا ہے۔انسان کی ہڈیوں کے لیے ٹھنڈک بہت نقصان دہ ہے، ٹھنڈا پانی انسانی درجہ حرارت کو کم کردیتا ہے جس کی وجہ سے ہڈیوں کو ٹھنڈک ملتی ہے اور پھر جوڑوں کے درد کی شکایت پیدا ہوتی ہے۔

Sharing is caring!

Categories

Comments are closed.