سب راستے بند تھے:اس وظیفہ سے مسائل کا حل

زندگی کے وسائل سے مایوسی کے بعد ہر انسان کی نظر ایک ایسی غیبی امداد کے پاس جاتی ہے وہ شخص اپنی مشکلات سے کسی غیبی امداد سے امید رکھتا ہے۔ لیکن یہ مدد صرف اور صرف اللہ تعالیٰ کی طرف سے ملتی ہے۔ وہ شخص مسلسل رو رہا تھا اس کی ہچکی بند گئی ۔ آنسوؤں سے اس کا رومال بھیگ گیا

تھا۔ منہ سے الفا ظ نہیں نکل رہے تھے ۔ بہت دیر کے بعد وہ گویا ہواکہ آپ کا جو وظیفہ پڑھا تھا وہ پوری یکسوئی کے ساتھ پڑھا تھا اور خود ہی کہنے لگا کہ آخر فائد ہ کیوں نہیں ہوتا ۔ وظیفہ اور دعا تو وہی ہے جو مسنون ہے اور سنت میں برکت ہے اور مشکلات نے مجھے گھیر لیا تھا قرضوں کے پہاڑ میں ڈوب گیا تھا۔ کوئی دن ایسا نہیں گزرتا تھا کہ میرے دروازے پر کوئی قرض خواہ نہ آتا تھا۔ ایک طرف قرض کا مطالبہ تو دوسری طرف کاروبار بری طرح تباہ ہو چکا تھا ۔ میں روزگار کے لیے کئی اسباب کرتا ۔ میری اولاد نے میرے ہاتھ بٹانے کے لیے میر ی بڑی کوشش کی۔ لیکن ہر طرف سے بے چینی اور رکاوٹ میرا مقدر بن چکی تھی۔ بعض دفعہ یہ سوچتا کہ خود کشی جائز ہوتی تو ضرور کرتا ۔ زندگی سے اس حد تک مایوسی کی حا لت تھی کہ کسی کام میں دل نہیں لگتا تھا ۔ حالات یہ تھے کہ کئی دن تک ایک کپڑا پہنے رکھتا تھا اور کوئی خوشی نصیب نہیں ہوتی تھی۔ پھر میں آپ کے بتائے ہوئے طریقے سے وظیفہ پڑھنا شروع کیا۔ اور مجھے امید ہونے لگی کہ

میرے حالا ت سنور جائیں گے۔ میں اپنے گھر والوں کو پڑھنے کی تلقین کی۔ پھر میں نے ایک چائے کا ہوٹل کھول لیا۔ پہلے تو حالات صیحح نہیں تھے ۔ پس اللہ تعالیٰ نے اس وظیفہ کی برکت سے میرے لیے راستے کا سبب بنا دیا ۔ اور میرا چائے کا روبار میں برکت ہونے لگی۔ اور اب میں خوشحال رہنے لگا۔ اب وظیفہ یہ ہے کہ جب شروع کریں تو اس کو دل کی گہرائیوں ، اعتماد اور پورے یقین سے پڑھیں ۔ جتنا یقین کامل ہوگا اتنا ہی اثرات کامل ہوں گے۔ جب بھی کوئی وظیفہ کریں تو سب سے پہلےاول و آخر تین ، پانچ یا گیارہ مرتبہ درودِ ابراہیمی لازمی پڑھیں۔ اور درمیان میں 313 مرتبہ یعنی صبح کے بعد اور عشاء سے پہلے دن میں دو مرتبہ یا ایک مرتبہ لازمی پڑھیں۔ اگر تعداد بڑھانا چا ہیں تو 786 مرتبہ صبح اور شام میں پڑھ لیں۔ کیونکہ جتنا زیادہ گڑ اتنا زیادہ میٹھا۔اور اٹھتے بیٹھتے 90 دن اس دعا کو پڑھیں۔ وہ دعا کیا ہے؟ “اَللَھُمَّ اخْفِنِیْ بِحَلَالِکْ عَنْ حَرْا مِکْ وَاغْنِیْنِی بَفَضْلاِ کْ عَنْ مَّنْ سَوَاکْ” ۔ اس کا ترجمہ یہ ہے کہ “الہی ٰ حرام مال سے بچا کر بذریعہ اپنے حلال مال کے میری کفالت فرمااور اپنے سبب کے مجھے اپنے غیر سے بے پرواہ کردے”۔ اس عمل کو چالیس دن یا کم ازکم نوے دن ضرور کریں۔ انشاءاللہ آپ کا قرض ، کاروبار اور مالی مشکلات اور جتنے بھی پریشانیاں ہوں گی وہ حل ہوجائیں گی۔ آمین۔

Sharing is caring!

Categories

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *