یہ وظیفہ کرنے کے لیے آپ بے چین ہو جائیں گے

اگر آپ غریب ہو اور آپ کے پاس پیسے نہیں تو ابھی یہ وظیفہ کر لو ۔ سلطانِ دولت بن جاؤ گے ہر چوک پر دولت بانٹتے پھر و گے۔ فرمانِ مصطفیٰ ہے: بندے کی اس ادا پر اللہ بے حد خوش ہوتاہے کہ وہ کھانا کھائے تو اس پر اللہ کی تعریف بیان کر ے یا پانی پیئے تو اس پر اللہ کی تعریف بیان کر ے” آج میں آپ کے

پیشِ نظر ایک با کمال وظیفہ لے کر حاضر ہوا ہوں۔ جس کی برکت و عظمت سے آپ دولت کے سلطان بن جا ؤ گے۔ اگر آپ غریب ہیں اور آپ کے پاس دولت نہیں غربت کی دلد میں پھنسے ہی چلے جا رہے ہیں اور اس سے نکلنے کا کوئی راستہ نظر نہیں آرہا تو اب آپ کو بلکل بھی پریشان ہونے کی ضرورت نہیں۔ آج ہی اس وظیفے پر عمل کر یں اور خود کو سلطانِ دولت بنتے ہوئے دیکھیں۔ عمل اور ضروری ہدایات: یہ وظیفہ آپ نے نمازِ عصر کے بعد کرنا ہے اور سورۃ الا عراف کی آیت نمبر نواسی کو ستراں مرتبہ پڑ ھنا ہے۔ پانچ مرتبہ درودِ پاک پڑ ھنا ہے اور آخر میں اللہ پاک سے دعا مانگنی ہے اور اس عمل کو نو روز تک کر نا ہے۔ اللہ پاک آپ کو سلطانِ دولت بنا دے گا آپ کے پاس اتنی دولت آ جائے گی کہ آپ ہر چوک پر بانٹتے پھر و گے۔ وظیفہ کر نے سے پہلے پہلے کچھ نہ کچھ صدقہ و خیرات کر لیا کر یں۔ جیسا کہ ہم سب ہی جانتے ہیں۔ کہ ہر مشکل اللہ کی طرف سے ہی آ تی ہے ہر مشکل کا ہر پریشانی کا ہر مصیبت کا ہر آزما ئش کا ہر خوشی کا ہر

راحت کا ہر سکون کا الغرض ہر چیز کا صرف اور صرف اللہ پاک ہی وارث ہے اور اللہ پاک کی ہی بادشاہی ہے کہ اس نے ہر چیز کو اپنے قبضہ و قدرت میں لی ہوئی ہے کوئی بھی اس کا مقابلہ نہیں کر سکتا ہے مقابلہ کرنا تو دور کوئی بھی اس کی برابری تک نہیں کر سکتا وہ اکیلا ہے اس کا کوئی شریک نہیں اسی کی بادشاہی ہے اور اسی کے لیے تمام تعریفیں ہیں اللہ پاک ہے اور سب تعریفیں اللہ تعالیٰ ہی کے لیے ہیں۔ تو آج کا وظیفہ ان لوگوں کے لیے ہے جو امیر ہونا چاہتے ہیں۔ جو غربت کی زندگی گزارتے گزارتے تنگ آ چکے ہیں اور چاہتے ہیں کہ ان کی زندگی خوشحال ہو جا ئے اور ہر طرح کی مصیبتوں سے وہ آزاد ہو جائیں تو یہ وظیفہ آج کا یہ وظیفہ انہی لوگوں کے لیے ہی ہے جو امیر ہونا چاہتے ہیں اور اپنی غربت مٹا نا چاہتے ہیں۔ یقین کیجئے اس وظیفے کے کرنے سے آپ سلطانِ دولت ہو جا ئیں گے ۔ آپ کے پاس دولت ہی دولت ہو گی اور آپ کو مالی لحاظ سے کسی بھی قسم کی پریشانی نہیں رہے گی۔ انشاءاللہ۔

Sharing is caring!

Categories

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *