عورتیں تراویح کی نماز کیسے پڑھیں تراویح پڑھنے کا آسان طریقہ سیکھیں

یہ جو تراویح کی نماز ہے جس طرح مردوں کے لیے پڑھنا ضروری ہے اسی طرح عورتوں کے لیے بھی اس نمازکو پڑھنا ضروری ہے ۔ بہت سی خواتین غلط فہمی کا شکار ہوتی ہیں۔ یہ جو تراویح کی نماز ہے صرف مردوں کے لیے پڑھنا ضروری ہے عورتوں کے لیے اس نماز کو پڑھنا ضروری نہیں ہے۔ حالانکہ بہت بڑی غلط فہمی

ہے۔ یا درکھیں کہ تراویح کی جو نماز ہے سنت مؤکدہ ہے۔ بغیر کسی شرعیت عذ ر کے اگر اس کوچھوڑیں گے تو گن اہ گارہوں گے ۔ مرد بھی پڑھیں گے ۔ اور عورتوں کے لیے بھی اس نماز کو پڑھنا ضروری ہے۔ اگر عورتیں اس نماز کو بغیر کسی شرعی عذر کے چھوڑیں گی تو گن اہ گارہوگی ۔ گن اہ ہوگا۔ اس لیے عورتیں بھی اس نماز کو ضرور پڑھیں۔ اب مسئلہ یہ ہے کہ مرد حضرات جو ہیں۔ وہ مساجد کے اندر چلے جاتے ہیں جہاں پر باقاعدہ تراویح کی نماز جماعت کے ساتھ ادا کی جاتی ہے ۔ لیکن اسلامی بہنیں گھر کے اندر اس نماز کس طریقے سے پڑھیں گے ؟ اس نما زکے پڑھنے کا طریقہ کیا ہے؟ اس کی نماز نیت کیسے کریں گی؟ اس نما ز میں کونسی صورتیں پڑھی جائیں گی؟ آپ کومکمل اور آسان طریقہ بتائیں گے۔ انشاءاللہ ! کوئی مشکل بات آپ کو نہیں بتائیں گے جس سے آپ اجڑ جائیں ۔ بالکل آسان لفظوں میں آپ کو تراویح کی نماز پڑھنے کاطریقہ بتائیں گے ۔ سب سےپہلے عشاء کے نماز کے چار فرض پڑھیں گے ۔ پھر دو رکعت سنت مؤکدہ پڑھیں گے۔ اس کے بعد وتر نہیں پڑھیں گے ۔ پھر بیس رکعت تروایح کی نماز ادا کی جائے گی۔ بیس رکعت تراویح کی نماز پڑھنے کے بعد پھر وتر پڑھیں گے۔ اور وہ بیس رکعت جو ہے دودو رکعت کرکے پڑھی جائے گی۔ دو رکعت پڑھ کر سلام پھیر دیں۔ اور اس

کے بعد دورکعت پڑھیں گے۔ اور اسی طرح بیس رکعت تراویح کے ادا کریں گے ۔ اگرآپ چار رکعت پڑھتی ہیں۔ تب بھی حرج نہیں ہے۔ نماز ہوجائے گی ۔ لیکن بہترنہیں ہے ۔ مناسب ہے کہ دو دو رکعت کرکے پڑھی جائے۔ ہر چار رکعت کے بعد تراویح کی جو دعا ہے ۔ اس دعاکو پڑھیں۔ اگر یہ دعا نہیں آتی تو کوئی حرج نہیں ہے۔ یہ خاص نہیں ہے کہ یہی دعاپڑھنی ہے۔ کوئی بھی دعا آپ کو آتی ہے۔ وہ دعا پڑھ لیں۔ اب بیس رکعت مکمل ہوگئیں ۔ اب مسئلہ یہ ہے کہ ان بیس رکعت میں کونسی کونسی سورتیں پڑھنی ہیں؟ اس کے لیے کوئی خاص سورتیں نہیں ہیں ۔ یہ ضروری نہیں ہے کہ یہ سورتیں پڑھی جائیں گی۔ جو بھی آپ کو سورت آتی ہے یا کوئی رکو ع آتا ہے۔ دس سورتیں آتی ہیں۔ دس پڑھ لیں۔ پانچ آتی ہیں۔ پانچ پڑھ لیں۔ اگر آپ کی تروایح کی رکعت باقی ہیں۔ تو پھر سے وہی سورتیں داہر لیں۔ ا ب اس کی نیت کیسے کریں؟ نیت کہتےہیں دل کے پختہ ارادے کو۔ زبان سے لفظ ادا کرنا لازم نہیں ہے۔ آپ دل کے اندر نیت کرتی ہیں کہ میں دورکعت تراویح ادا کرتی ہوں۔ بس یہی نیت ہوگئی۔ بعض علماء کہتے ہیں کہ زبان سے نیت کرنا مستحب ہے۔ اگر آپ زبان سے نیت کرتے ہیں تو اس طرح بھی کرسکتے ہیں۔ میں نیت کرتی ہوں دو رکعت تراویح واسطے اللہ تعالیٰ کے اور منہ خانہ کعبہ کے اور اللہ اکبر ۔ یہ طریقہ ہے۔ اس کے بعد وتر کی رکعت پڑھی جائیں گی۔ اور پھر چاہیں تو نفل بھی ادا کرسکتی ہیں۔ چاہیں تونہ پڑھیں آپ کی مرضی ہے۔

Sharing is caring!

Categories

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *