شوگر کے پھوڑے ایک کپ پانی سے ٹھیک۔ گھر بیٹے آسان علاج .

ذیا بیطس کے علاج میں میتھی کو مفید بتایا جاتاہے۔بتایا جاتاہے کہ شوگر کے مرض میں میتھی دانہ کا استعمال جسم میں شوگر کی سطح کو متوازن رکھنے اور انسولین کی مزاحمت کو کم کرتاہے۔ماہرین صحت کا کہنا ہے کہ چندروز تک میتھی کے بیج پیس کر روزانہ تقریباً بیس گرام کھانے سے خون میں شوگر کی مقدار کم

ہوجاتی ہے۔ماہر معالج کے مشورے پر شوگر کے تناسب سے میتھی کے بیج کا استعمال 100گرام روزانہ تک بھی کیا جا سکتا ہے ۔میتھی کے بیج دال کی طرح یا کسی سبزی میں ملا کر پکا کے بھی استعمال ہو سکتے ہیں ۔شوگر کے مریضوں کو میتھی کے بیج استعمال کروانے کا طریقہ یہ ہے کہ میتھی کے بیجوں کو پیس لیں اور صبح دوپہر شام بیس بیس گرام سادہ پانی سے استعمال کریں۔ شوگر زیادہ ہوتو تیس تیس گرام اور اگر کم ہوتو دس دس گرام بھی صبح دو پہر شام استعمال کیے جا سکتے ہیںماہرین کا یہ بھی کہنا ہے کہ اس کے استعمال کے کوئی مضر اثرات نہیں ہیں۔ایک چائے کا چمچ میتھی دانہ ایک کپ پانی میں شامل کرکے پینا ہارمونز کی بے ترتیبی میں مفید بتایا گیا ہےاگر مسلسل ذہنی دباؤ ہوتو اس کے لیے میتھی دانہ،لیموں کا رس،شہد ،تلسی کے چند پتے اور ایک دار چینی کا ٹکڑا ایک کپ پانی میں اُبال کر ٹھنڈا کرکے پی لیا جائے۔ماہواری کے درد میں کمی ایک چٹکی میتھی دانہ ایک گلاس نیم گرم پانی کے ساتھ پینا ماہواری کے درد میں مفیدہے۔ایام مخصوصہ سے دو یا تین دن پہلے بھی اگر اس نسخہ پر عمل کیا جائے تو ایام کی وجہ سے ہونے والی دوسری پریشانیوں سے

بھی محفوظ رہا جا سکتاہے۔تین کھانے کے چمچ میتھی دانہ دو کپ پانی میں اتنا اُبالیں کہ پانی آدھ رہ جائے۔ اب میتھی دانہ کا پیسٹ بنالیں اور اس پیسٹ کو بلیک ہیڈز اور کھلے مساموں پر لگائیں۔اسے خشک ہونے دیں پھرچہرے پر اسکرب کرکے اُتار لیں۔پہلی مرتبہ کے استعمال سے واضح فرق محسوس ہوگااور چند روز کے استعمال سے بلیک ہیڈز ختم ہو جائیں گے۔میتھی دانہ کے پانی کو بالوں کی جڑوں میں پوری رات لگا رہنے دیں۔صبح نیم گرم پانی سے دھولیں۔اس سے بالوں کی جڑیں مضبوط ہوتی ہیں اور بال گھنے ہوتے ہیںمیتھی دانہ دودھ پلانے والی ماؤں کے لیے مفید ہے ۔اس کے علاوہ ڈیلیوری کے بعد ہونے والی کمزوری میں بھی میتھی دانے کا استعمال مفید ہے۔ یہ ہڈیوں کو مضبوط کرتاہے۔ہرے پر کیل اور مہاسوں کو دور کرنے کے لیے چار کپ پانی میں چار کھانے کے چمچ میتھی دانہ شامل کرکے رات بھر کے لیے رکھ دیں۔صبح اس پانی کو چھان کر پندرہ منٹ تک اُبالنے کے بعد ٹھنڈا کرلیں،یہ پانی روزانہ دن میں دو مرتبہ چہرے کی جلد پر لگانے سے کیل مہاسے دور ہو جاتے ہیںمیتھی کے استعمال سے آنکھوں کی پیلاہٹ دور ہو تی ہے۔میتھی کے استعمال سے منہ کا کڑوا ذائقہ درست ہوجاتاہے۔میتھی کھانے سے رال بہنے جیسے مسئلے سے نجات ملتی ہے۔میتھی بھوک کی کمی کو دور کرتی ہے

Sharing is caring!

Categories

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *