صرف ایک کام ہے اور انعامات پانچ عدد دیئے جائیں گے

حضور صلی اللہ تعالیٰ علیہ وآلہ وسلم کا فرمان ہے کہ پانچ وقت نماز پڑھنے والوں کے لئے پانچ انعامات ہیں رزق کی تنگی دور کر دی جائے گی ، ع ذ ا ب ق ب ر سے محفوظ رہو گے ، نامہ اعمال دائیں ہاتھ میں دیا جائے گا، پل صراط سے بجلی کی تیزی سے گزر جاؤ گے، بغیر حساب جنت میں داخل کر دیئے جاؤ گے۔

نماز کے بعد دعا بھی مانگا کیجئے جب دعا مانگنا کم کریں گے تو مصائب نازل ہوں گے جب صدقات دینا چھوڑ دیں گے تو بیماریاں بڑھیں گی جب زکوٰۃ بند کر دیں گے تو مویشی ہلاک ہو ں گے یعنی کہ مالی نقصان ہو گا جب بادشاہ ظلم کریں گے تو بارشیں روک لی جائیں گی جب ز ن ا عام ہوجائے گا تو اچانک م و ت بڑھ جائے گی ، جب ریاکاری بڑھ جائے گی تو زلزلے بکثرت آئیں گے ، جب عہد شکنی کریں گے تو اللہ انہیں ق ت ل کے ذریعے آزمائے گا ، جب حکمِ خداوندی کے خلاف فیصلے ہوں گے تو ان پر ان کے دشمنوں کا غلبہ ہو جائے گا ، جب ناپ تو ل میں کمی کریں گے تو ان پر ق ہ ر مسلط کر دیا جائے گا یعنی کہ ان پر رزق کی کمی کر دی جائے گی ۔حضرت ابوہریرہ رضی اللہ عنہ روایت کرتے ہیں کہ میں نے سنا کہ حضور نبی اکرم صلیٰ اللہ علیہ وآلہ وسلم نے فرمایا: ایک آدمی نے گناہ کیا (راوی نے کبھی یہ الفاظ کہے کہ ایک شخص سے گناہ سر زد ہوا) تو وہ عرض گزار ہوا: اے میرے رب! میں گناہ کر بیٹھا (کبھی یہ الفاظ کہے کہ مجھ

سے گناہ ہوگیا) پس تو مجھے بخش دے۔ چنانچہ اُس کے رب نے فرمایا: میرا بندہ جانتا ہے کہ اس کا رب ہے جو گناہوں کو معاف کرتا اور ان کے باعث مواخذہ کرتا ہے، لہٰذا میں نے اپنے بندے کو بخش دیا۔ اس کے بعد جب تک اللہ تعالیٰ نے چاہا وہ گناہ سے باز رہا ، پھر اُس نے گناہ کیا (یا اس سے گناہ سرزد ہو گیا) تو اس نے عرض کیا: اے میرے رب! میں گناہ کر بیٹھا (یا مجھ سے گناہ ہو گیا) پس مجھے بخش دے۔ اﷲ تعالیٰ فرماتا ہے کہ میرا بندہ جانتا ہے کہ اس کا رب ہے جو گناہ معاف کرتا اور ان کے باعث مواخذہ کرتا ہے، پس میں نے اپنے بندے کو پھر بخش دیا۔ پھر وہ ٹھہرا رہا جب تک اللہ نے چاہا، پھر اس نےگناہ کیا (اور کبھی یہ کہا کہ مجھ سے گناہ ہوگیا)۔ راوی کا بیان ہے کہ وہ پھر عرض گزار ہوا: اے رب! مجھ سے گناہ ہو گیا یا میں پھر گناہ کر بیٹھا، پس تو مجھے بخش دے۔ چنانچہ اﷲ تعالیٰ نے فرمایا کہ میرا بندہ جانتا ہے کہ اس کا رب ہے جو گناہ معاف کرتا اور ان کے سبب پکڑتا ہے، لہٰذا میں نے اپنے بندے کو تیسری دفعہ بھی بخش دیا۔ پس جو چاہے کرے۔اللہ ہم سب کا حامی وناصر ہو۔آمین

Sharing is caring!

Categories

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *