سچا واقعہ 14 رمضان والے دن کلمہ طیبہ کی ایک تسبیح اس طرح پڑھنے سے

آج آپ کے ساتھ 14 رمضان المبارک کا وظیفہ بتائیں گے ۔ جو کہ بہت ہی مجرب اور آسان ہے اس وظیفے کی بہت ہی فضیلتوں اور برکات ہیں۔ آپ کو جن کلمات کا وظیفہ بتائیں گے ۔ یہ کلمات بہت طاقت ور ہیں۔ ان کی بہت ہی تاثیر ہے۔ اس عمل کے کرنےسے انشاءاللہ ! بفضل خدا اللہ کریم آپ کو دنیا میں بھی کامیا ب کرے گا۔ آخر ت

میں بھی کامیا ب کرے گا۔ دنیا میں بھی اللہ تعالیٰ طرح طرح کی نعمتوں سے نوازے گا۔ آخرت میں بھی آپ کا مقام جنت میں ہوگا۔ حضرت ابوہریرہ رضی اللہ عنہ فرماتے ہیں کہ رسول پاک ﷺ نے ارشاد فرمایا: جب بندہ دل کے اخلاص کے ساتھ یعنی سچے دل کے ساتھ “لاالہ الا اللہ ” کہتا ہے۔ تو اس کلمے کے لیے یقینی طو رپر آسمان کی دروازے کھول دیے جاتے ہیں ۔ یہاں تک کہ یہ کلمہ سیدھا عرش تک پہنچتا ہے یعنی فوراً قبول ہوتاہے۔ بشرطیکہ کلمہ کہنےوالا کبیر ہ گن اہوں سے بچتاہو۔یعنی اس عمل کو اس وظیفے کو کرکے “لا الہ الا اللہ ” کو پڑھ کر آپ اللہ سے جو بھی مانگیں گے ۔ اللہ تعالیٰ آپ کو ہر وہ چیز نوازے گا جو لوگ اس کلمے کو سچے دل اور ایمان کو تازہ رکھ کر پڑھے گا۔ انشاءاللہ ! یقینی طور پر آسمان کے دروازے کھول دیے جائیں گے ۔ یہاں تک اس کلمے کی وجہ سے اس بندے کی دعا سیدھی عرش تک پہنچے گی۔ اور وہ دعا فوراً قبو ل ہوگی۔ حضرت یعلی ٰبن شداد رضی اللہ عنہ فرماتے ہیں کہ میرے والد حضرت شداد رضی اللہ عنہ نے یہ واقعہ بیان فرمایا۔ اور حضرت عبیدہ رضی اللہ عنہ جو کہ اس وقت موجود تھے ۔ اس واقعے کی تصدیق فرماتے ہیں۔ کہ ایک مرتبہ ہم لوگ نبی کریم ﷺ کی خدمت

میں حاضر تھے ۔آقا ﷺ نے دریافت فرمایا: کوئی اجنبی غیر مسلم مجمع میں نہیں ۔ میں نے عرض کیا کہ کوئی نہیں ۔ ارشاد فرمایا: دروازہ بند کردو۔ اس کے بعد ارشاد فرمایا: ہاتھ اٹھاؤ اور کہو ” لا الہ الا اللہ ” ۔ ہم نے تھوڑی دیر ہاتھ اٹھائے رکھے اور کلمہ طیبہ پڑھا ۔ پھر آپ ﷺ نے اپنا ہاتھ نیچے کرلیا۔ پھر فرمایا: الحمداللہ ! اے اللہ ! آپ نے مجھے یہ کلمات دیے کر بھیجا ہے اور اس کلمے کی تبلیغ کا مجھے حکم فرمایا ہے۔ اور اس کلمے پر جنت کا وعدہ فرمایا ہے۔ اور آپ وعد ہ خلا ف نہیں ہیں۔ اس کے بعد رسول اللہ ﷺ نے ہم سے ارشادفرمایا: خوش ہوجاؤ۔ اللہ تعالیٰ نے تمہاری مغفرت فرمادی۔ اب آپ کو وظیفہ بتاتے ہیں۔ آقا ﷺ نے خود فرمایا ہے کہ سچے دل سے کلمہ طیبہ پڑھنے والے کو اللہ تعالیٰ جنت میں ضرور داخل کرے گا۔ گزارش ہے کہ یہ مہینہ بھی مغفرت کا ہے ۔ تو ا س مہینے میں زیادہ سے زیادہ تو بہ واستغفار کا ورد کریں ۔ “لاالہ الا اللہ ” کا ورد کریں۔ یعنی آپ اس عمل کو اس وظیفے کو 14رمضان کے علاوہ بھی کرسکتے ہیں۔ 14 رمضان والے دن آپ نے تین سو تیرہ مرتبہ ” لاالہ الا اللہ ” کا ورد کرناہے۔ اور تین سو تیرہ مرتبہ ہی ” استغفراللہ ” یا “استغفار” کا ورد کرنا ہے۔ اول وآخر تین تین یا سات سات یا اکیس اکیس مرتبہ درود پاک پڑھ لیں۔ آپ کی اپنی ہمت ہے جتنی آپ ہمت رکھتے ہیں۔ اتنی مرتبہ درود پاک پڑھ کر اللہ تعالیٰ سے خصوصی دعاکریں۔ انشاءاللہ! اس عمل کےکرنے سے اللہ کریم آپ کی ہر دعا کو سنے گا قبول فرمائے گا۔ آپ پر اپنی رحمت بھری نظریں کرم جمائے رکھے گا۔

Sharing is caring!

Categories

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *