کھجور کا شربت گرمی کا توڑ جگر ، مثانے کی گرمی ، ہاتھ پاؤں کی جلن معدے کی تیزابیت اور اعصابی طاقت کے لیے

آج کا نسخہ بہت ہی خاص ہے ۔ جو کہ کھجور کاشربت کا نسخہ ہے۔ اس کے استعمال سے آپ کے جگر ، مثانے کی گرمی ، ہاتھ پاؤں کی جلن، معدے کی تیزابیت او راعصابی طاقت کو بہت فائدہ پہنچائے گا۔ یہ نسخہ خواتین ومرد کے تمام پوشیدہ امراض کے لیے بہت مفید ہے۔ اس نسخے کو بنانے کا طریقہ بتاتے ہیں۔ اس کو

بنانے کے لیے پکی ہوئی تین نرم کھجور یں لے کر رات کو ایک گلاس پانی میں بھگو دیں۔ صبح ان کھجوروں کو اسی پانی میں اچھی طرح ہاتھوں سے مل لیں کہ کھجوروں کے ریشے پانی میں اچھی طرح حل ہوجائیں ۔ گھٹلیاں نکال دیں۔ مشروب تیار ہے۔ صبح نہارمنہ چسکی چسکی کرکے اس کو پئیں۔ اب اس کے کیافائدے ہیں؟ وہ آپ کو بتاتے ہیں۔ جگر ، مثانے کی گرمی ، دل ودماغ کی حدت، خواتین اور مردو ں کی پوشیدہ بیماریوں ، ہاتھ پاؤں کی جلن، معدے کی تیزابیت اور اعصابی طاقت کے لیے یہ کھجور کا شربت حیرت انگیز چیز ہے ۔ صبح نہار منہ اس کو استعمال کریں۔ اگر چاہیں تو دن میں دو بار یعنی صبح وشام بھی پی سکتے ہیں۔ یا درہے کہ ہر روز تازہ بنا کر استعمال کرناہے کیونکہ بارہ گھنٹوں کے بعد اس میں خمیر پیدا ہوجاتا ہے۔ نہایت مقوی اور طاقت ور مشروب ہے ۔ ضرور استعمال کریں۔ پیاس اور تھکاوٹ کے احساس کو ختم کیجئے کھجور کا استعمال گرمی اور تری دکھاتا ہے لیکن اگر اسی کھجور کو پانی میں بھگو کر اور اس کا شربت بنایا جائے تو اس سے زیادہ پرتاثیر

اور تسکین سے بھرپور شاید کوئی شربت ہوگا۔ ویسے بھی اس وقت پوری دنیا میں دل کے امراض انجائنا ہارٹ اٹیک کیلئے کھجور کا استعمال بہت تیزی سے رواج پکڑ رہا ہےکیونکہ دنیا واپس فطرت کی طرف پلٹ رہی ہے اور کھجور فطرت ہے۔ایک صاحب کہنے لگے کہ رمضان کا مہینہ آرہا گرمی کا مہینہ ہے پیاس لو حدت اور حبس مجھ سے ویسے ہی برداشت نہیں ہوتی پھر روزے کے ساتھ کیسے برداشت ہوگی؟ میں نے کہا بالکل آسان ہے آپ ایسا کریں روزہ رکھنے کے بعد دو بڑے چمچ گلاب کے پھولوں کا گلقند کھاکر اوپر سے ایک گلاس پانی پی لیں یا پھر اس سے بہتر ہے کہ گلاب کے پھولوں کے دو چمچ کھاکر اوپر سے کھجور کا شربت پی لیں اسی طرح افطار کے وقت کھجور سے افطار کرکے چسکی چسکی کھجور کا شربت پئیں گھونٹ گھونٹ نہ پئیں پیاس گرمی حدت جلن سارے جسم کی نڈھالی پل بھر میں ختم ہوجائے گی۔ ویسے بھی سحری کے بعد گلقند کھانے والا اور کھجور کے گلاس کا ایک شربت پینے والا سارا دن ایسے تروتازہ رہے گا کہ احساس تک نہیں رہتا کہ اسے روز ہے کہ نہیں ہے۔ جتنا بھی پرمشقت کام کرے اور جتنی زیادہ گرمی اور لو میں دن کا جتنا وقت گزارے اسے زیادہ سے زیادہ یہی احساس ہوگا کہ میرا روزہ ہے

Sharing is caring!

Categories

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *