کچن سے آٹھ دانے کالی مرچ لے کر یہ عمل کر لو۔

آج کے دور میں ہر کوئی یہ چا ہتا ہے کہ اس کے پاس پیسہ آ جا ئے دولت آ جا ئے وہ امیر ہو جا ئے اس کا اپنا گھر بن جا ئے وہ کسی کامحتاج نہ ہو گھر سے تنگ دستی ختم ہو جا ئے غربت ختم ہو جا ئے یعنی پیسے کے لیے انسان کچھ بھی کر سکتا ہے جو لوگ یہ خواہش رکھتے ہیں جو لوگ یہ چاہتے ہیں کہ ان کا گھر دولت

سے بھر جا ئے تو آج آپ کے لیے ایک بہت ہی زبردست عمل لے کر حاضر ہوا ہوں یہ عمل کرنے سے انشاء اللہ دولت کی کمی پوری ہو جا ئے گی پیسوں کے بارے میں جتنے بھی آپ کے مسائل ہیں۔ وہ سب کے سب حل ہو جا ئیں گے او ر ایسا غیبی معجزہ دیکھیں گے کہ گھر میں ہر طرف سے دولت کی بارش ہو نا شروع ہو جا ئے گی اس عمل کو کرنے کے بعد آپ خود دیکھیں گے کہ پورا سال اللہ کریم کا کرم رہے گا ذرہ برابر بھی تنگی نہیں آ ئے گی گھر سے غربت بھاگ جا ئے گی غربت ختم ہو جا ئے گی اور دولت آنا شروع ہو جا ئے گی آج میں آپ لوگوں کو کالی مرچ کا عمل بتانے کے لیے جا رہا ہوں جو کہ آج سے پہلے میں نے آپ کو نہیں بتا یا اس سے پہلے آپ لوگوں کو لونگ کا عمل بتا یا تھا اور الا ئچی کا عمل بتا یا تھا کافی لوگوں نے کیا اور کافی لوگوں کو فائدہ ہوا تو انشاء اللہ میرا مالک جو سب کو رزق عطا فر ما تا ہے۔ جو سب کی تنگ دستی کو دور فر ما تا ہے جو سب کو پالنے والا ہے سب کی پرورش کر نے والا ہے سب کے رزق

میں بر کت اور ترقی عطا فر ما نے والا ہے وہ پروردگار آپ کی تنگ دستی کو بھی دور فر ما دے گا اور انشاء اللہ آپ کے گھر میں بھی دولت آنا شروع ہو جا ئے گی تو کالی مر چ سے آج کل کون واقف نہیں ہے دنیا کے ہر ملک میں کالی مرچ پائی جاتی ہے اور آپ کے گھر میں بھی موجود ہو گی اور اس کالی مرچ کو گرم مصالحے کا لازمی جز ما نا جا تا ہے حتیٰ کہ گرم مصا لحے کی ملکہ کہا جا تا ہے ۔ کالی مرچ کو جی ہاں کالی مرچ کے بغیر گرم مصالحے کی رونق ہی ختم ہو جاتی ہے آج میں آپ لوگوں کو کالی مرچ کا ایک ایسا عمل بتانے جا رہا وہں اس کو آپ لوگ ضرور کر لیں انشاء اللہ آپ کو بہت زیادہ فائدہ ہو گا کالی مرچ کا عمل کرنے کے لیے آپ لوگوں کو بڑی توجہ کے ساتھ عمل سننا ہو گا کالی مرچ کے آٹھ دانے لیں ہر دانے پر آٹھ آٹھ مرتبہ یہ عمل پڑھنا ہے واللہ خیر الرزقین ۔ یا مالک یا رزاق۔ درودِ ابراہیمی یہ تینوں چیزیں آٹھ آٹھ مرتبہ پڑھنی ہیں۔

Sharing is caring!

Categories

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *