گھر میں موجود چار طرح کے بلیچ بازاری مہنگے بلیچ خریدنے کی ضرورت نہیں

کچھ خواتین رنگت کو نکھارنے کیلئے بلیچ کا سہارا لینا چاہتی ہیں ۔ لیکن کیمیکلز کے مضر اثرات سے بھی گھبراتی ہیں ۔ کیونکہ کیمیکلز سے بنی ہوئی بلیچ جلد کو جلا کر وقتی طور پر اُجلا کرتی ہے اور جلد کو ناقابل تلافی نقصان پہنچاتی ہے ۔ لیکن ہم آ پ کو ایسے قدرتی ماسک کے بارے میں بتائیں گے جو کہ آ پ کی رنگت کو

نکھاریں گے اور جلد کی حفاظت بھی کریں گے سب سے اچھی بات ان ماسک میں استعمال ہونیوالی چیزیں لینے کیلئے آپ کو کسی بھی سٹور نہیں جانا پڑے گا ۔ یہ چیزیں آپ کو آپکے کچن میں ہی مل جائیں گی ۔دہی کو ہی پندرہ سے بیس منٹ تک چہرے پر ماسک کی طرح لگا یا جاسکتا ہے یا پھر تھوڑا سا چنے کا آٹا یا جو کا دلیہ ملا کر ہموار پیسٹ بنائیں اور کچھ دیر لگانے کے بعد سکرب کی طرح ہلکے ہاتھوں سے مل کر صاف کرلیں ۔ بیسن کا ماسک یہ حیرت انگیز طور پر جلد کو نہ صرف نکھارتا ہے صاف بھی کرتا ہے بیسن کو چہرے کے علاوہ پورے جسم پر ماسک اور سکرب کی طرح استعمال کیا جاسکتا ہے ۔ بیسن کو کسی حصے پر لگانے کے بعد ٹھنڈے پانی سے دھوئیں ۔ سنگترے اور اس کے چھلکے وٹامن سے بھرپور ہوتے ہیں سنگترے کے چھلکے کو باریک پیس لیں اور دہی کے ساتھ ملا کر ہموار ماسک بنالیں ۔ چہرے پر لگا کر بیس منٹ بعد چہرہ دھو لیں اس کے علاوہ اگر سنگترے کا رس موجود ہے تو تھوڑے سے رس میں چٹکی بھر ہلدی ملائیں اور ماسک کی طرح بیس منٹ تک چہرے پر لگائیں او ر بعد میں چہرہ دھولیں یہ ماسک آپ کے بجھے ہوئے چہرے میں ایک روشن نکھار پیدا کردیگا ۔ ہلدی کا ماسک ہلدی جلد سے داغ دھبے ختم کرنے اور رنگت کو صاف کرنے کیلئے ایجنٹ کا کام کرتی ہے ۔ ہلدی کو نارنجی کے رس ، ٹماٹر کے رس یا دہی اور شہد کے ساتھ چٹکی بھر ہی ملا کر استعما ل کریں کیونکہ اس کو زیادہ مقدار میں استعمال کرنے سے چہرے پر پیلے نشان پڑ سکتے ہیں۔

Sharing is caring!

Categories

Comments are closed.