نہ جنوری نہ فروری، تعلیمی اداروں کو اپریل میں کھولا جائے۔۔ ایسی خبر آگئی کہ ہر طرف کھلبلی مچ گئی

اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک )سٹوڈنٹس پیرنٹس ایسوسی ایشن نے رواں ماہ سکول کھولنے کی مخالفت کر دی ،چیئرمین ایسوسی ایشن ندیم مرزا نے سکولز یکم اپریل سے کھولنے کا مطالبہ کردیا۔ ندیم مرزا کا کہنا ہے کہ سکولز صرف فیس وصولی کے لیے جلد کھولے جا رہے ہیں۔ گزشتہ روز وزیر تعلیم شفقت محمود نے 18جنوری سے مرحلہ وار تعلیمی ادارے کھولنے کا

اعلان کرتے ہوئے کہا آئی جی اور ایس ایس پی اسلام آباد کو فوری طور پر معطل کیا جا ئے جن کی غفلت اور لاپروائی سے قیمتی جان چلی گئی ۔ اُسامہ ستی کے والد کہ نویں سے 12ویں جماعت تک تعلیمی اداروں کو 18جنوری سے کھول دیا جائیگا، 18جنوری نویں سے 12ویں کی وہ جماعتیں جن کا امتحان ہونا ہے، وہ شروع ہو جائیں گی اور ان جماعتوں کے طالبعلم اپنے اسکول و کالجز میں جائیں گے اور پڑھائی شروع ہو جائے گی،25 جنوری سے پرائمری سے 8ویں تک باقی طالبعلم اسکول آنا شروع کردیں گے ، یکم فروری کو یونیورسٹی، کالجز سمیت ہائر ایجوکیشن کے ادارے کھول دئیے جائیں گے۔ دوسری جانب پیپلز پارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری نے کہا ہے کہ افسوس ہے ایم کیو ایم کے منتخب لوگ ہر بار حکومت کا حصہ رہے مگر کراچی کو حصہ نہ دلاسکے، کراچی کیلئے جب بھی مطالبہ کیا گیا تو ہمارا مذاق اڑایا گیا۔ بلاول بھٹو نے متحدہ قومی موومنٹ کو تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہا کہ ایم کیوایم کے نمائندے میرے پیدا ہونےسے بھی پہلے یہاں سے منتخب ہوتے رہے ہیں ،پیپلزپارٹی تو تنقید کا نشانہ بنتی رہی ہے مگر انہوں نے اس شہر کیلئے کیا کیا؟ وزیرِ اعظم عمران خان کی زیر صدارت وفاقی کابینہ کا اجلاس انہوں نے کہا کہ ہم کراچی میں پیدا ہوئے یہی جیتے ہیں اور اسی کو اون کرتے ہیں، ہم اپنے وسائل سے کراچی کیلئے انویسٹمنٹ لانے کی کوشش کررہےہیں، پبلک پرائیوٹ پارٹنر شپ کے تحت ہم کراچی میں کام کرتے ہیں۔انہوں نے کہا کہ یہ بات سمجھ سے بالاتر ہے کہ ایم کیوایم کس مجبوری کے تحت موجودہ حکومت کے ساتھ کھڑی ہے، ایم کیوایم کے ووٹوں کی وجہ سے حکومت قائم ہے، ایم کیو ایم کے ووٹوں کی وجہ سے گیس کے مسائل سب کے سامنے ہیں، باقی سیاسی جماعتوں سے بھی اپیل کریں گے کراچی کے عوام کا سوچیں۔

Sharing is caring!

Categories

Comments are closed.