آئندہ چوبیس گھنٹوں کا موسم کیسا رہے گا؟ محکمہ موسمیات نے پیشنگوئی کر دی

اسلام آباد(پی این آئی)محکمہ موسمیات کے مطابق جمعرات کے روز ملک کے بیشتر علاقوں میں موسم سرد اور خشک جبکہ بالائی علاقوں اور شمالی بلوچستان میں شدید سرد رہے گا ۔ اس دوران پنجاب کے میدانی علاقوں اور بالائی سندھ میں صبح اور رات کے اوقات میں شدیددھند چھاۓ رہنے کا امکان ہے۔گذشتہ 24 گھنٹے کا موسم ملک کے بیشتر

علاقوں میں موسم سرداور خشک جبکہ شمالی بلو چستان ،شمالی علاقہ جات، کشمیر اور بالائی خیبر پختو نخوا میں شدید سرد رہا۔آج ریکارڈ کیےگئےکم سےکم درجہ حرارت:لہہ منفی 11، گوپس منفی10 ،استور، سکردومنفی09 ، کالام منفی 08،پاراچنار منفی 06،ہنزہ،گلگت، بگروٹ ، کوئٹہ اورقلات میں منفی 05ڈگری سینٹی گریڈریکارڈ کیا گیا۔ سعودی عرب میں موسم سرما کا آغاز ہو چکا ہے۔خصوصاً گزشتہ دو ہفتوں کے دوران بارش کے باعث درجہ حرارت بہت نیچے آ گیا ہے۔محکمہ موسمیا ت نے خبردار کیا ہے کہ اگلے ہفتے سے مملکت میں سردی کی شدید لہر آ رہی ہے جس کے باعث کئی شہروں میں پارہ منفی 2ڈگری تک پہنچ جائے گا۔ اس دوران شدید سرد ہوائیں چلیں گی ، جبکہ کئی علاقوں میں برف باری بھی ہو گی۔محکمہ موسمیات کے مطابق سردی کی یہ لہر شمالی حدود ،الجوف ریجن، حائل ،قصیم اور مشرقی ریجن جبکہ شمالی ریجنز کے بعض علاقوں کو اپنی لپیٹ میں لے گی۔اس لہر سے ریاض ریجن اور شمالی علاقے بھی متاثر ہوں گے۔مملکت کے شمالی علاقوں میں پارہ 5 ڈگری سے منفی ڈگری تک پہنچنے ک امکان ہے۔ امکان ظاہر کیا جا رہا ہے کہ اس بار سعودی عرب میں سردی کئی سال پُرانا ریکارڈ سکتا ہے۔سعودی عرب کے سردعلاقوں کے مکینوں کو ہدایت کی گئی ہے کہ وہ گرم ملبوسات نکال لیں تاکہ سردی سے بچاؤ ہو سکے۔اگلے چند روز میں مزید بارشیں ہو سکتی ہیں۔ محکمہ شہری دفاع کی جانب سے مقامی افراد اور تارکین سے کہا گیا ہے کہ بارش کے دوران وادیوں اور نشیبی علاقوں کا رُخ کرنے سے گریز کریں اور کسی بھی پکنک کی غرض سے نہ جائیں۔ کیونکہ نشیبی علاقوں میں پانی اکٹھا ہونے سے ڈرائیورز کو شدید مشکلات کا سامنا ہو سکتا ہے۔خصوصاًگاڑیوں کے وائپرزکو سفر سے پہلے چیک کر لیا جائے کیونکہ بارش ہونے کی صورت میں وائپر خراب ہونے پر گاڑی چلانے میں انتہائی دشواری ہوتی ہے اور حادثات کا امکان بڑھ جاتا ہے۔ تمام ڈرائیورز حدِ رفتار سے تجاوز نہ کریں اور طغیانی والے علاقوں سے دُور رہنا ہی بہتر ہو گا۔ کیونکہ ماضی میں بارشوں کے دوران کئی سیاحوں اور ڈرائیورز کی وادیوں میں پانی میں پھنس جانے سے جانیں جا چکی ہیں۔

Sharing is caring!

Categories

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *