عالم اسلام کے عظیم رہنما شاہ فیصل مرحوم

ریاض(۔3دسمبر2020ء) سعودی شاہی خاندان کو پچھلے تین ماہ کے اندر کئی شہزادوں اور شہزادیوں کی موت کا صدمہ سہنا پڑا ہے۔ جس کا دُکھ ابھی کمی نہیں ہوا تھا کہ ایک اور سعودی شہزادی انتقا-ل فرما گئی ہیں۔ تفصیلات کے مطابق اس وقت سعودی مملکت میں سوگ کا سماں ہے۔ شاہی خاندان اور سعودی عوام دُکھ سے دوچار ہیں۔ اس کی وجہ سعودی عرب کے شاہی خاندان سے تعلق رکھنے والی اہم شخصیت شہزادی حصہ بنت فیصل کا انتقا-ل کر جانا ہے

۔ مرحومہ شہزادی حصہ عالم اسلام کے مشہور رہنما اور سابق سعودی فرمانروا شاہ فیصل بن عبدالعزیز کی صاحبزادی تھیں، جو علالت کے باعث انتق-ل کر گئی ہیں۔ ان کی نماز جنازہ آج ریاض میں ادا کی جائے گی جس کے بعد ان کی اسی شہر میں تدفین کر دی جائے گی۔سعودی ایوان شاہی کی جانب سے شہزدی حصہ بنت فیصل بن عبد العزیز کے انتقا-ل پر گہرے دکھ ورنج کا اظہار کرتے ہوئے ان کی مغفرت اور بلندی درجات کی دعا کی گئی ہے۔واضح رہے کہ گزشتہ ماہ سعودی شہزادہ نواف بن سعید بن سعود بن عبدالعزیز السعود انتقا-ل فرما گئے ہیں۔ان کے انتقا-ل سے کچھ روز قبل ایک سعودی شہزادہ سعود بن فہد بن منصور بن جلاوی السعوددُنیا سے رخصت ہو گئے تھے۔ اس سے قبل سعودی شہزادی قماشہ کا بھی انتقا-ل ہو گیا تھا جو سعودی شہزادے نہار بن سعود بن عبدالعزیز السعود کی والدہ تھیں۔ اس کے دو روز بعد ہی ایک اور سعودی شہزادی مضاوی بنت عبداللہ بن محمد ابن جلوی السعودچل بسیں۔ان دونوں شہزادیوں کو ریاض کے مقامی قبرستان میں سپرد خاک کیا گیا تھا۔جبکہ 6 جولائی کو شاہی خاندان کے رُکن اور معروف سعودی شہزادے خالد بن سعود بن عبدالعزیزگزشتہ روز انتقا-ل کر گئے تھے، ان کی عمر 95 برس تھے جن کی نماز جنازہ ریاض میں ادا کرنے کے بعد انہیں مقامی قبرستان میں سپرد خاک کردیا گیا تھا۔ 28 جون کو معروف سعودی شہزادے بندر بن سعد بن محمد بن عبدالعزیز بن سعود بن فیصل السعود انتقا-ل کر گئے تھے۔

Sharing is caring!

Categories

Comments are closed.