سابق صدر آصف زرداری کی اسٹیبلشمنٹ کے ساتھ ڈیل ہوگئی

سابق صدر آصف زرداری کی اسٹیبلشمنٹ کے ساتھ ڈیل ہوگئی
آصف زرداری نے کہا کہ میں مقدمات سے خود نمٹ لوں گا، آپ بلاول بھٹو کو آزادی سے سیاست کرنے کی اجازت دیں، جس پر بلاول بھٹو کو بھرپورسیاست کی اجازت مل چکی ہے، اگر وہ حکومت بنائے گا توکوئی اعتراض نہیں کرے گا۔سینئر تجزیہ کار ہارون الرشید

لاہور( 15 نومبر2020ء) سینئر تجزیہ کار ہارون الرشید نے کہا ہے کہ آصف زرداری کی اسٹیبلشمنٹ کے ساتھ ڈیل ہوچکی ہے، آصف زرداری نے کہا کہ میں اپنے خلاف مقدمات سے خود نمٹ لوں گا، آپ بلاول بھٹو کو آزادی سے سیاست کرنے کی اجازت دیں، جس پر بلاول بھٹو کو بھرپورسیاست کی اجازت مل چکی ہے، اگر وہ حکومت بنائے گا توکوئی اعتراض نہیں کرے گا۔انہوں نے نجی ٹی وی کے پروگرام میں اپنے تبصرے میں کہا کہ گلگت بلتستان کے الیکشن کی موجودہ صورتحال میں کوئی اہمیت نہیں ہے، وہاں پی ٹی آئی حکومت بنالے یا پھر پیپلزپارٹی حکومت بنا لے، گلگت کو ہم نے اتنی اہمیت نہیں دی، کشمیر میں تو ہمارے مجاہدین بھی جاتے رہے، گلگت میں ہر کسی نہ کسی گاؤں میں شہید کی قبریں موجود ہیں، مسلم لیگ ن کے قائدین کے انتخابی مہم چلانے کا اثر یہ ہوا وہاں کے لوگوں نے کہا کہ ہم ووٹ نہیں دیں گے۔ہر کسی کو ذاتی خطاؤں پر معاف کیا جاسکتا ہے۔ ملک کیخلاف خرابی پیدا کرنے والوں کیخلاف مہم چلانی ہوگی۔ انہوں نے کہا کہ آصف زرداری نے اسٹیبلشمنٹ کے ساتھ اپنے معاملات بہتر کرلیے ہیں ۔زرداری نے اسٹیبشلمنٹ سے کہا ہے کہ میں اپنے خلاف مقدمات سے نمٹ لوں گا، مجھے مقدمات سے نمٹنا آتا ہے۔لیکن آپ بلاول بھٹو کو آزادی سے سیاست کرنے کی اجازت دیں، بلاول بھٹو کو سیاست کرنے کی اجازت مل چکی ہے۔ بلاول بھٹو کے راستے میں کوئی رکاوٹ نہیں ہے، اگر وہ حکومت بنائے گا تو اس پر کسی کو کوئی اعتراض نہیں ہوگا۔بلاول بھٹو نے گلگت میں سخت سردی میں انتخابی وقت گزارا ہے۔ پیپلزپارٹی اگر وہاں جیتی تو وہ سرپرائز دے سکتی ہے۔ ن لیگ اور جے یوآئی ف کو اتحاد کے سواکوئی آپشن نہیں ہوگا۔ہارون رشید نے کہا کہ گلگت الیکشن میں ذوالفقار بھٹو نے جو انتخابی مہم چلائی وہ آج بھی وہاں کے لوگوں کو یاد ہے، پھر بے نظیر بھٹو اور آصف زرداری نے بھی وہاں کام کیا۔ عمران خان کی شخصیت بڑی قدآور ہے، بلاول کی شخصیت میں وہ نہیں ہے۔ تاہم بلاول بھٹو بڑی محنت کررہا ہے۔

Sharing is caring!

Categories

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *