بلیک میلنگ جاری۔۔!! پاکستان کو کون کونسے اسلامی ممالک اسرائیل کو تسلیم کرنے کیلئے پریشرائز کر رہے ہیں؟ ایک انکشاف نے اُمت مسلمہ کا سر شرم سے جُھکا دیا

لاہور (ویب ڈیسک) سینئر صحافی و تجزیہ کار ظفر ہلالی کا کہنا ہے کہ اسرائیل کو تسلیم کرنے کیلئے امریکا کا پاکستان پر ہر وقت پریشر رہا ہے اور اب سعودی عرب سے بھی پریشر ہے۔

جی این این کے پروگرام ” ویو پوائنٹ ” میں گفتگو کرتے ہوئے سینئر صحافی و تجزیہ کار ظفر ہلالی کا کہنا ہے کہ اسرائیل کو تسلیم کرنے کیلئے پاکستان پر پریشر ہے،اسرائیل کو تسلیم کرنے کیلئے امریکا سے پاکستان پر پریشر ہر وقت رہا ہے اور اب سعودی عرب سے بھی پریشر ہے۔
اگر نہیں ہوتا تو ہم فکر مند کیوں ہیں کہ ہمارے ورکرز کو نکال دیتے سعودی عرب سے،ایک بلین ڈالر کیوں مانگا گیا تھا ہم سے،کیوں ہم نے چین سے لے کر ان کو واپس کیا۔یہ پریشر نہیں بلکہ بلیک میلنگ ہے۔
سینئر صحافی ظفر ہلالی نے کہا کہ بلیک میلنگ کا مقصد یہ ہے کہ جب لوگوں کو پتا ہے کہ ہمارا ایک اصول موقف ہے،ہم نے اس لیے یہ موقف لیا کیونکہ پوری دنیا نے یہ موقف لیا کہ اس کا دو ریاستی حل ہے،ایک فلسطینی ریاست ہوگی اور ایک اسرائیلی ریاست ہوگی۔
یہ وہ فلسطینی ریاست ہوگی جس کو خود فلسطین مانتا ہے۔اگر یہ فیصلہ ہو تو ہم اسرائیل کو مانیں گے۔ اگر ہم اپنے وعدے سے ہٹ گئیں ہیں تو آپ انڈیا کو کیوں کہتے ہیں کہ وہ اپنا وعدہ پورا کرے۔اس وقت اسرائیل کو ماننے کا مطلب ہے کہ جو اس نے کیا ہے جو بھی غیر انسانی حربے استعمال کیے ہیں اس کو ہم میڈل دے رہے ہیں کہ آو تم اتنے اچھے ہو۔

Sharing is caring!

Categories

Comments are closed.