کورونا کی دوسری لہر۔۔۔شاپنگ مالز اور تجارتی مراکزکو بند کرنے کے نئے اوقات پر غور

کراچی (ویب ڈیسک) سندھ حکومت نے کورونا وبا کی دوسری لہر میں شدت آنے کے بعد شام 6 بجے تک تمام چھوٹے بڑے شاپنگ مالز اور تجارتی مراکز بند کرانے پر غور شروع کردیا ہے۔نجی ٹی وی چینل کے مطابق سندھ میں گزشتہ 10 روز کے دوران کورونا مثبت کیسز کی شرح بڑھ کر 5 فیصد سے

زائد ہوگئی ہے ، جس کے بعد صوبائی حکومت نے کاروباری سرگرمیوں کے اوقات کار محدود کرنے پر غور شروع کردیا ہے۔ اس کے تحت شام 6 بجے کے بعد تمام چھوٹے بڑے شاپنگ مالز اور تجارتی مارکیٹوں کو بند کرانے پر غور کیا جارہا ہے، اس کے علاوہ ریسٹورینٹس اور ہوٹلز میں ٹیبل سروس پر دوبارہ پابندی بھی زیرِ غور ہے۔ذرائع سندھ حکومت کا کہنا ہے کہ وزیراعلیٰ نے کورونا وائرس میں اضافے کے سبب مزید بندشوں کے لئے اسٹیک ہولڈرز سے مشاورت شروع کردی ہے۔ اس حوالے سے کوئی بھی فیصلہ وفاقی حکومت کی مشاورت سے ہوگا، سندھ حکومت کی جانب سے کورونا ایس او پیز کے تحت پابندیوں کے لئے این سی او سی کو سفارشات ارسال کئے جانے کا امکان ہے۔ وفاقی حکومت نے تجاویز منظور کیں تو سندھ میں بھی پابندیوں کا اطلاق ہوگا۔یاد رہے کہ ملک بھر میں عالمی وبا کے بڑھتے ہوئے کیسز کی وجہ سے حکومت نے بڑا فیصلہ کر لیا۔ نیشنل کمانڈ اینڈ آپریشن کے آج ہونے والے اجلاس میں ملک بھر میں شاپنگ مالز، دکانیں، مارکیٹیں رات 10 بجے بند کرنے کا فیصلہ کیا تھا۔ اس کے علاوہ شادی ہالز، ریسٹورنٹس بھی رات 10 بجے بند کیے جائیں گے۔ اس سے قبل حکومت نے نیا حکم نامہ جاری کیا جس کے مطابق گھروں سے باہر نکلنے پر عوام کو ماسک کا استعمال لازمی کرنا ہو گا۔ بازاروں اور شاپنگ مال وغیرہ میں بھی ماسک کا استعمال لازم ہو گا۔تفریح گاہیں اور پارک بھی شام 6 بجے بند کرنے کا فیصلہ کر لیا گیا ہے۔این سی او سی کی جانب سے جاری بیان میں کہا گیا ہے کہ میڈیکل سٹورز، کلینک اور ہسپتال اس پابندی سے مستثنیٰ ہونگے ۔ حکام کی جانب سے وبا کی روک تھام کیلئے کل سے ماسک پہننا بھی لازمی قرار دیدیا گیا ہے۔ خلاف ورزی پر بھاری جرمانہ عائد ہو گا۔

Sharing is caring!

Categories

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *