اپوزیشن جماعتوں کے درمیان پھوٹ پڑگئی ، بڑا دعویٰ کر دیا گیا

لاہور(ویب ڈیسک) سینئر تجزیہ کار ہارون الرشید نے کہا ہے کہ مسلم لیگ ن اور جے یوآئی ف کی ٹوٹ پھوٹ دیکھ کرلوگ حیران رہ جائیں گے، جماعت اسلامی بھی خطرناک راستے پر چل پڑی، سراج الحق نے بھی زندگی کا بڑا بلنڈر کردیا ہے،ن لیگ کو توکچھ اندازہ ہی نہیں کہ وہ کیا کر بیٹھے ہیں۔

انہوں نے نجی ٹی وی کے پروگرام میں گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ 2002ء میں سارے بھاگ کر چودھری پرویز الٰہی کے پاس چلے گئے تھے، اس وقت مجبوری تھی کہ نوازشریف جدہ چلے گئے تھے، اقتدار کی پیاس اتنی ہوتی ہے پانی کے بغیر انسان زندہ نہیں رہ سکتا۔اسی طرح جماعت اسلامی بھی اس راستے پر چل پڑی ہے کہ ان کے لیے خطرناک ہے۔ اسی طرح جمعیت علماء اسلام ف اور ن لیگ میں بھی اتنی تباہی ہوگی کہ سب حیرت زدہ رہ جائیں گے۔اگر لال مسجد کا واقعہ نہ ہوتا تو ق لیگ حکومت بنا لیتی۔ جنرل ر عبدالقادر بلوچ 7نومبر کو پریس کانفرنس کریں گے۔ ن لیگ کو کچھ اندازہ نہیں کہ وہ کیا کر بیٹھے ہیں، ن لیگ کی طرح الطاف حسین بھی یہی سمجھتا تھا کہ وہ ٹھیک ہے۔نوازشریف نے کچھ لفظ کہے کہ افسر اور سپاہیوں میں بغاوت ہونی چاہیے، لیکن ایاز صادق نے ساری بات کردی۔ ن لیگ والے بھی ان کا دفاع کررہے ہیں۔حلقے میں صورتحال یہ ہے کہ ایاز صادق کا الیکشن جیتنا تو دور ٹکٹ بھی نہیں ملے گا۔ اب ایاز صادق کہہ رہا ہے کہ میری مراد شاہ محمود قریشی تھی۔ایوب خان اور ضیاء الحق نے کیا کیا تھا، اس کی ذمہ دار آج کی فوج تو نہیں ہے۔ان کو پتا نہیں کیا کردیا ہے، انہوں نے لوگوں کے سینوں میں آگ بھڑکا دی ہے۔ میں عمران خان سے مہنگائی کی وجہ سے پریشان تھا، لیکن اب ہم کہتے ہیں عمران خان ان سے ہزاروں درجے اچھا ہے۔انہوں نے کہا کہ سراج الحق اپنی زندگی کا سب سے بڑا بلنڈر کرنے جا رہے ہیں۔کہتے ہیں اگر جھوٹ بولنے کا پرائز ملتا تو عمران خان کو مل جاتا، سراج الحق نے نوازشریف اور آصف زرداری کیخلاف لانگ مارچ کا اعلان نہیں کیا، لیکن اب عمران خان کے خلاف کیا ہے۔ حال یہ ہے کہ لانگ مارچ کے اعلان کے ساتھ ہی فنڈنگ ختم ہوگئی ہے۔

Sharing is caring!

Categories

Comments are closed.