عمران خان کےدورہِ سعودی عرب کا امکان

اسلام آباد(نیوزڈیسک)وزیر اعظم عمران خان نے کہا ہے کہ وہ جلد سعودی عرب کا دورہ کریں گے، پاکستان کے سعودی عرب ساتھ تعلقات کبھی خراب ہو ہی نہیں سکتے، اس وقت بھی تعلقات بہترین ہیں۔نجی ٹی وی چینل کو انٹرویو دیتے ہوئے عمران خان نے کہا کہ سعودی عرب کے ساتھ بہترین تعلقات کی ایک لمبی تاریخ

ہے۔سعودی عرب کے دورے کے حوالے سے پوچھے گئے سوال پر وزیر اعظم نے کہا کہ ‘میں سوچ رہا ہوں کہ سعودی عرب کا دورہ کروں۔ پہلے بھی کورونا وائرس کی وبا کی وجہ سے نہیں جا سکا تھا۔’انہوں نے کہا کہ جلد ہی وہ سعودی عرب کا دورہ کریں گے۔دوسری جانب وزیراعظم عمران خان کی زیرصدارت حکومتی ترجمانوں کا اجلاس ہوا جس میں لاہور، اسلام آباد سے پارٹی رہنماؤں اور ترجمانوں نے شرکت کی۔اجلاس میں موجودہ سیاسی صورتحال پرحکومتی حکمت عملی اور اپوزیشن کی حکومت مخالف تحریک پرمشاورت کی گئی۔شرکاء کو نوازشریف کی وطن واپسی سےمتعلق حکومتی اقدامات پربریفنگ دی گئی۔اس موقع پر وزیراعظم نے کہا کہ قوم اداروں کےساتھ کھڑی ہے، سول ملٹری تعلقات میں کوئی تناؤنہیں، فوج آئینی حدودمیں رہتےہوئےجمہوری حکومت کےساتھ ہے۔وزیراعظم نے واضح کیا کہ اپوزیشن کی تحریک سےکوئی خطرہ نہیں، اپوزیشن کوفوج سےاس لئےمسئلہ ہےکہ وہ ان کی کرپشن پکڑتی ہے۔انہوں نے کہا کہ قوم دیکھ رہی ہےنوازشریف کےبیانات پرپاکستان مخالف لوگ بغلیں بجارہےہیں، نوازشریف اوربھارت پاکستانی اداروں کو کمزور کرنا چاہتے ہیں، نوازشریف مودی سرکارکابیانیہ لےکرچل رہےہیں، نوازشریف اپنےبچوں کولندن میں بٹھاکرعوام کوسڑکوں پرلاناچاہتےہیں، نوازشریف کےبچےلندن میں آرام کریں،عوام سڑکوں پرآئیں،یہ کیسا انقلاب؟

Sharing is caring!

Categories

Comments are closed.