عمران خان کے پیچھے جن کا ہاتھ ہے ہمارے جلسے کے بعد وہ نہیں رہے گا۔۔۔!!!(ن)لیگ نے حکومت کو چیلنج کرتے ہوئے بڑا دعویٰ کر دیا

لاہور(ویب ڈیسک) سابق صوبائی وزیر نے کہا ہے کہ اس حکومت کے پیچھے جو ہیں، ہمارے جلسوں کے بعد وہ بھی حکومت کے کام نہیں آئیں گے۔ تفصیلات کے مطابق نجی ٹی وی سے گفتگو کرتے ہوئے سابق صوبائی وزیر رانا ثناءاللہ نے کہا ہے کہ یہ حکومت اپنے پاؤں پر تو کھڑی نہیں ہے، جس وجہ

سے سے یہ حکومت کھڑی ہے اس وجہ کو بھی سمجھ آ جائے گی کہ پبلک کی رائے کیا ہے، اور ان کا حق نہیں دبایا جا سکتا، حکومت کی اپنی کارکردگی یہ ہے کہ یہ ایک بجٹ منظور کروانےکے لیے حاضری نہیں پوری کرسکتے۔انہوں نے مزید کہا کہ حکومت کے پیچھے جن کا ہاتھ ہے ہمیں امید ہے عوام کی رائے کا احترام کریں گے اور حکومت کے پیچھے سے ہاتھ ہٹا لیں گے۔ رانا ثناءاللہ کا کہنا تھا کہ حکومتی وزراء و وزیراعظم بجائے ملک میں مہنگائی یا دیگر مسائل پر غور کریں وہ ہر روز اپوزیشن کے خلاف بیان بازی کرتے نظر آتے ہیں۔انہوں نے کہا کہ حکومت کہتی کہ انہیں اپوزیشن کے جلسوں سے کوئی خوف نہیں ہے تو پھر حکومت بتائے کہ راستوں میں کنٹینیرز کیوں رکھے جا رہے ہیں؟ ہمارے کارکنوں کو کارنر میٹنگز سے کیوں روکا جا رہا ہے؟ ان کے خلاف مقدمات کیوں بنائے جا رہے ہیں؟ ہمارے بینرز کیوں اکھاڑے جا رہے ہیں؟ ان سب اقدامات کے باوجود حکومت کہہ رہی ہے کہ انہوں نے اپوزیشن کو جلسوں کی اجازت دی ہے۔اس سے قبل مسلم لیگ ن کے رہنماء احسن اقبال نے کہا تھا کہ اب حکومت یہ جلسہ روک نہیں سکتی کیونکہ 16 اکتوبر کو پاکستان کے عوام مہنگائی کے خلاف عوامی ریفرنڈم میں شرکت سے ثابت کریں گے کہ وہ حکومت کی ناکامی سے تنگ آچکے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ پی ڈی ایم نے پر امن اور جمہوری جدوجہد کے تحت چار بڑے جلسوں کا اعلان کیا ہے جس دن سے اے پی سی میں پی ڈی ایم کے قیام کا اعلان ہوا تب سے حکومت کی ٹانگیں کانپ رہی ہیں۔ واضح رہے کہ اپوزیشن اتحاد پی ڈی ایم نے 16 اکتوبر سے ملک بھر میں جلسے کرنے کا اعلان کیا تھا جس کا پہلا جلسہ 16 اکتوبر کو گوجرانوالہ میں ہوگا۔

Sharing is caring!

Categories

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *