بریکنگ نیوز: پٹرول کی قیمت میں کمی کی بجائے اضافہ کردیا گیا، تبدیلی والوں نے خاموشی سے عوام کے ساتھ گیم ڈال دی

لاہور(ویب ڈیسک) حکومت نے مہنگائی کے ستائے عوام کو پٹرول کی قیمتوں میں ریلیف سے محروم کردیا،پٹرول پر لیوی میں خاموشی سے ایک روپے 14 پیسے کا اضافہ کردیا گیا،پٹرول اور ہائی اسپیڈ ڈیزل کی اصل قیمتوں میں کمی کے باوجود عوام کو ریلیف سے محروم کردیا گیا۔ذرائع کے مطابق حکومت نے آج سے

پٹرول پر فی لیٹر لیوی میں ایک روپے چودہ پیسے اضافے کا اطلاق کردیا ، پٹرول پر لیوی 27 روپے 32 پیسے سے بڑھاکر 28 روپے 46 پیسے فی لیٹر کردی گئی جبکہ ہائی سپیڈ ڈیزل کے فی لیٹر پر 30 روپے کی لیوی برقرار رہے گی،پٹرول کے فی لیٹر پر 15 روپے گیارہ پیسے اورہائی سپیڈ ڈیزل کے فی لیٹر پر 15 روپے 12 پیسے سیلز ٹیکس الگ سے وصول کیا جارہا ہے۔پٹرول اور ہائی سپیڈ ڈیزل کی اصل قیمتوں میں کمی کے باوجود عوام کو ریلیف سے محروم کردیا گیا،ذرائع کے مطابق پٹرول کی اصل قیمت 51 روپے 50 پیسے سے کم ہوکر 50 روپے 39 پیسے فی لیٹر اور ہائی سپیڈ ڈیزل کی اصل قیمت 52 روپے پانچ پیسے سے کم ہوکر 51 روپے 92 پیسے فی لیٹر ہوگئی،پٹرول پر 53 روپے 58 پیسے فی لیٹر لیوی جبکہ ہائی سپیڈ ڈیزل پر 54 روپے 14 پیسے فی لیٹر لیوی،ٹیکس اور ڈیوٹیز عائد ہیں۔حکومت نے گزشتہ روز سولہ سے اکتیس اکتوبر تک پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتیں برقرار رکھنے کا فیصلہ کیا تھا۔یاد رہے کہ حکومت نے پیٹرول کی فی لیٹر قیمت 103 اعشاریہ 97 پیسے پر برقراررکھنے کا فیصلہ کیا تھا.تفصیل کے مطابق حکومت پاکستان نے پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں کسی قسم کا ردوبدل نہ کرتے ہوئے قیمتیں برقرار رکھی تھیں ،حکومت کی جانب سے جاری نوٹیفیکیشن کے مطابق ہائی سپیڈ ڈیزل کی قیمت 104 اعشاریہ 6 پر برقرار رہے گی۔اس کے علاوہ پیٹرول 103 اعشاریہ 97 پیسے، مٹی کا تیل 65 اعشاریہ 29 پیسے اور لائٹ ڈیزل رواں ماہ اکتوبر میں 62 اعشاریہ 86 پیسے پر فروخت ہوگا،خیال رہے کہ پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں کمی کا امکان ظاہر کیا جا رہا تھا۔ ذرائع کا کہنا تھا کہ پٹرولیم مصنوعات پر پٹرولیم لیوی کی شرح میں کمی کا امکان ہے۔ اس وقت پٹرول پر 27 روپے 32 پیسے فی لٹر، ہائی سپیڈ ڈیزل پر 30 روپے فی لٹر اور مٹی کے تیل پر 11 روپے 43 پیسے فی لٹر لیوی عائد ہے۔

Sharing is caring!

Categories

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *