خاتون کے نام کی وجہ سے اس کی نوکری کی درخواست مسترد کردی گئی، آخر ایسا کیا نام ہوسکتا ہے؟ جان کر آپ کو بھی جھٹکا لگے گا

نئی دہلی(مانیٹرنگ ڈیسک) بھارت میں ایک لڑکی کے عجیب و غریب، بلکہ گالی نما نام کی وجہ سے اس کی نوکری کی درخواست مسترد ہونے کا ایسا واقعہ پیش آ گیا ہے کہ ہر سننے والا دنگ رہ جائے۔ انڈیا ٹائمز کے مطابق اس لڑکی کا تعلق بھارتی ریاست آسام کے شہر گوگامکھ سے ہے جس نے زرعی اکنامکس

اینڈ فارم مینجمنٹ میں ماسٹرز ڈگری لے رکھی ہے۔ گزشتہ دنوں نیشنل سیڈ کارپوریشن لمیٹڈ میں آسامیاں مشتہر کی گئیں جہاں اس لڑکی نے بھی نوکری کے لیے اپلائی کرنے کی کوشش کی۔نوکری کے لیے آن لائن فارم بھرنا تھا۔ وہ فارم بھرتی مگر ہر بار کارپوریشن کا سافٹ ویئر اس کے نام پر اعتراض لگا کر اس کی درخواست مسترد کر دیتا۔ رپورٹ کے مطابق اس لڑکی کا پہلا نام تو پریانکا ہے مگر سر نیم Chutiaہے۔ اس لفظ کو بھارت اور پاکستان کے لوگ ایک گالی کے طور پر استعمال کرتے ہیں لیکن آسام کے اس علاقے کی مقامی زبان میں اس کا تلفظ ’سوتیا‘ ہے اور اسی طرح بولا جاتا ہے تاہم غالباً سافٹ ویئر کو یہ بات معلوم نہیں لہٰذا وہ اس نام کو گالی سمجھ کر ہر بار اسے مسترد کر دیتا ہے۔ فیس بک پر ایک پوسٹ میمں پریانکا بتایا ہے کہ ”میں جب بھی فارم میں اپنا نام لکھتی ہوں تو سافٹ ویئر پر خودکار پیغام نمودار ہوتا ہے کہ ’مناسب نام‘ تحریر کریں۔اس صورتحال نے مجھے شدید ذہنی پریشانی میں مبتلا کررکھا ہے ۔“ ہیں لیکن آسام کے اس علاقے کی مقامی زبان میں اس کا تلفظ ’سوتیا‘ ہے اور اسی طرح بولا جاتا ہے تاہم غالباً سافٹ ویئر کو یہ بات معلوم نہیں لہٰذا وہ اس نام کو گالی سمجھ کر ہر بار اسے مسترد کر دیتا ہے۔ فیس بک پر ایک پوسٹ میمں پریانکا بتایا ہے کہ ”میں جب بھی فارم میں اپنا نام لکھتی ہوں تو سافٹ ویئر پر خودکار پیغام نمودار ہوتا ہے کہ ’مناسب نام‘ تحریر کریں۔اس صورتحال نے مجھے شدید ذہنی پریشانی میں مبتلا کررکھا ہے ۔“

Sharing is caring!

Categories

Comments are closed.