عمران خان کا ایک اور ماسٹر اسٹروک! حکومت کے کونسے اقدام نے اپوزیشن میں کھلبلی مچا دی؟ نواز شریف اور مریم نواز ہنگامی فیصلے کرنے پر مجبور

اسلام آباد (نیوز ڈیسک ) سینئر تجزیہ کار سمیع ابراہیم نے انکشاف کیا کہ سپریم کورٹ نے ہدایت کی ہے کہ نیب کی 120 نئی عدالتیں بنائی جائیں ، تاکہ احتساب کے عمل میں تیزی لائی جائے اور مقدمات کو جلد ازجلد نمٹایا جاسکے، وزیراعظم عمران خان کی طرف اس پر

مثبت اشارہ دے دیا گیا ،

اور اس حوالے سے وزارت قانون کو ہدیات بھی جاری کردی گئیں ، اسی اقدام نے نوازشریف اور مریم نواز کو فوری طور پر ایک مہم چلانے پر مجبور کیا ، کیوں کہ اگر یہ احتساب عدالتیں کام شروع کردیں گی تو اپوزیشن کے بہت سارے لوگوں کو سزائیں ہوجائیں گی ۔اپنے یوٹیوب چینل پر گفتگو میں انہوں نے بتایا کہ اگلے 4 ہفتوں میں 60 نئی عدالتیں کام شروع کردیں گی ، اس مقصد کے لیے احتساب عدالتوں کے 60 ججوں کی تعیناتی بھی کی جائے گی ، جب کہ اس کے ایک ماہ بعد مزید 60 عدالتیں بھی کام شروع کردیں گی ، جہاں مقدمات کی سماعت روزانہ کی بنیاد پر کی جائے گی ، تاکہ کوئی بھی مقدمہ التوا کا شکار نہ رہے ، یہی وہ بنیادی وجہ ہے جس نے سابق وزیراعظم نوازشریف اور ان کی صاحبزادی مریم نواز کو مجبور کیا کہ وہ فوری طور پر میدان میں آجائیں، کیوں کہ نئی عدالتوں کے قیام کے بعد اگر روزانہ کی بنیاد پر سماعت ہوتو اس مطلب ہے اگلے 4 سے6 ہفتوں میں سب مقدمات کا فیصلہ ہوجائے گا ۔تجزیہ کار سمیع ابراہیم کے مطابق تمام نئی عدالتیں صوبوں میں موجود ہائیکورٹس کے ساتھ مشاورت سے قیام میں لائی جائیں گی، جس کے لئے ان عدالتوں کے چیف جسٹس صاحبان کے ساتھ مشورہ کیا جائے گا، کیوں کہ احتساب عدالتوں میں تعیناتی کے لیے شاید حاضر سروس سیشن جج اتنی تعداد میں دستیاب نہ ہوں تو اس مقصد کے لیے بعض ریٹائرڈ ججوں کو بھی شامل کیا جائے گا، لیکن صرف ان ججوں کو لیا جائے گا جن کی دیانت داری پر کسی قسم کا کوئی شک و شبہ نہ ہو ۔

Sharing is caring!

Categories

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *