صرف پاکستان ہی نہیں پوری دنیا کے امن میں مددگار ۔۔۔۔ پاک فوج نے دنیا کے مختلف ممالک میں امن قائم رکھنے کے لیے کیا قربانیاں دیں ؟ اقوام متحدہ بھی اعتراف کرنے پر مجبور

لاہور(ویب ڈیسک) اقوام متحدہ کو 75 ویں یوم تاسیس پر مسلح افواج کی جانب سے نیک خواہشات کا اظہار کیا گیا۔ اقوام متحدہ کے امن مشنز میں پاکستان سب سے بڑا حصہ دار ہے، پاک فوج کے شعبہ تعلقات عامہ(آئی ایس پی آر) کے ڈائریکٹر جنرل میجر جنرل بابر افتخار نے اقوام متحدہ کے یوم تاسیس

پر ٹوئیٹ کرتے ہوئے کہا کہ پاکستان 28 ممالک میں 46 اقوام متحدہ میشنز میں حصہ لے چکا، 158 پاکستانی پیس کیپرز نے عالمی امن کے لئے اپنی جانوں کا نذرانہ پیش کیا 2 لاکھ پاکستانی فوجی اقوام متحدہ کے امن مشنز میں حصہ لے چکے ہیں۔انہوں نے کہا کہ اقوام متحدہ کے امن مشن میں افواج پاکستان کی خدمات کی طویل تاریخ پاکستان نے 30 ستمبر1947کو یو این امن مشن میں شمولیت اختیار کی پاکستانی امن مشن کا آغاز 1960 میں کانگو میں پہلا دستہ بھیج کر کیا۔ اس سال نائیک محمد نعیم رضا شہید کو اَقوامِ متحدہ کا خصوصی میڈل عَطاء کیا گیا۔مردوں کے ساتھ ساتھ پاکستان کی خواتین بھی کانگو میں اقوامِ متحدہ کے امن مشن میں خدمات انجام دے رہا ہے۔ڈی جی آئی ایس پی آر نے لکھا کہ پاکستان اقوامِ متحدہ کے حوالے سے بہترین خدمات سر انجام دے رہا ہے۔ متعدد عالمی رہنماں اور اقوام متحدہ کی قیادت نے عالمی سطح پر پاکستان کی پُر امن فوج کی کارکردگی کو بڑے پیمانے پر تسلیم کیا۔انہوں نے کہا کہ پاکستانی خواتین بھی اقوامِ متحدہ امن مشن کانگو میں امن کے لئے سر گرم عمل ہیں۔ امریکی نائب معاون وزیر خارجہ بھی پاکستانی خواتین سے متاثر ہوئے بغیر نہ رہ سکے۔ایلس ویلز نے پاکستانی خواتین کے امن کردار کو سراہا۔پاکستانی خواتین کا کردار نہایت متاثر کن، امن کے لئے خدمات کلیدی ہیں۔ اقوامِ متحدہ چھتری تلے تا حال83 پاکستانی خواتین امن مشن کا حصہ ہیں،پاکستان19جون2019میں کانگو میں خواتین دستے تعینات کرنے والا پہلا ملک بن گیا۔

Sharing is caring!

Categories

Comments are closed.