پہلے انکار اب منظور۔!! عاصم سلیم باجوہ نے کچھ عرصہ قبل استعفیٰ دیا تھا تب انکار مگر اب منظور کیوں؟ اقرار الحسن نے حیران کُن بات کہہ ڈالی

کراچی (ویب ڈیسک) سماجی رابطوں کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر اقرار الحسن سید نے پیغام جاری کرتے ہوئے کہا کہ” وزیرِ اعظم نے معاونِ خصوصی جناب عاصم سلیم باجوہ کا استعفیٰ قبول کر لیا۔ سوال یہ ہے کہ کچھ دن پہلے جب انہوں نے استعفیٰ دیا تھا تو تب قبول کیوں نہیں کیا گیا،

اب کچھ ہی عرصے بعد ایسا کیا ہوا کہ استعفیٰ قبول کر لیا گیا؟ وزیرِ اعظم آفس اور عاصم سلیم باجوہ، دونوں کو وضاحت کرنی چاہئیے”۔ ان کے اس ٹوئٹ پر صارفین نے مختلف انداز میں رد عمل دیا۔ آتی نامی صارف نے لکھا کہ ” کیوں وضاحت کریں؟؟ آپ کے ابو جان کے نوکر لگے ہوے ہیں جو آپ کو وضاحتیں دیں؟؟۔ جس کے جواب میں اقرار الحسن نے کہا کہ ” جی، میرے بھی، میرے ابو جان کے بھی اور میری اولاد کے بھی نوکر ہیں۔۔۔ ان کی تنخواہیں اور مراعات آپ کے اور میرے ٹیکس کے پیسوں سے جاتی ہیں میری زندگی۔۔۔ تہذیب سے سوال کرنا ہمارا حق ہے اور جواب دینا ان کا فرض۔ وہ الگ بات کہ اس ملک میں اپنے فرض کی ادائیگی کا رواج نہیں”۔ ایک اور بشیر احمد نامی صارف نے لکھا کہ ” مرضی ہے ان کی بھائی”۔ جس کا جواب دیتے ہوئے اقرار الحسن نے کہا “مرضی ان کی نہیں مرضی ہم عوام کی ہے بھائی جو اس ملک کو اپنے ٹیکس کے پیسوں سے چلاتے ہیں”۔

Sharing is caring!

Categories

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *