اس کے گھر والوں کو یہ معلوم ہوا

تد-فین کے وقت بنائی گئی ویڈیو میں مر-دہ دشخص کو کیا کرتے دیکھا گیا ؟ واقعے نے ورطہ حیرت میں ڈال دیا

جکارتہ (این این آئی )انڈونیشیا کے انتہائی شمال میں واقع جزیرے سولاویسی کے شہر میناڈو کے قبرستان میں ایک شخص کو دفنا- نے کے کافی دیر بعد اس کے گھر والوں کو یہ معلوم ہوا کہ تد*فین کے وقت مذکورہ شخص زندہ تھا۔ ۔عرب ٹی وی کے مطابق می-ت کے ایک عزیز یا کسی گھر والے نے اپنا موبائل فون نکال کر لکڑی کے تابوت کو قبر میں اتارے جانے کے وقت وڈیو بنانا شروع کر دی۔اس موقع پر تمام لوگ ہی غم سے نڈھال تھے لہذا کسی نے بھی اس چیز کونوٹ نہیں کیا جس کا کیمرے نے پتہ چلایا۔ اس وڈیو میں نظر آ رہا ہے کہ تابوت کے اندر موجود م-یت نے اپنا ہاتھ ہلایا۔ یہ سب پلک جھپکتے میں ہوا جس نے مقامی اور بین الاقوامی میڈیا میں کام کرنے والوں کو ورطہ حیرت میں ڈال دیا۔یہاں تک کہ جس شخص نے یہ وڈیو بنائی وہ بھی م-یت کی جانب سے اس حرکت پر متوجہ نہیں ہوا۔ البتہ اگلے روز وڈیو دیکھنے پر لوگوں نے اس چیز کو نوٹ کیا۔ اس پر حکام سے سوال کیا گیا کہ آیا مذکورہ شخص تد-فین کے وقت زندہ تھا یا نہیں۔ حکام نے قبر کھولنے کا فیصلہ کیا تا کہ اس بات کی تصدیق ہو سکے کہ آیا تابوت کے شیشے سے طاہر ہونے والی بات اس بات کا ثبوت ہے کہ م-یت زندہ تھی ، یا پھر وڈیو میں جو کچھ ظاہر ہوا وہ ایک چھوٹا سے جانور تھا، جیسا کہ سوشل میڈیا کی بعض ویب سائٹس پر بتایا گیا ہے۔بعدازاں بتایاگیاکہ وڈیو میں جو حرکت ظاہر ہوئی وہ روشنی کا عکس ہو سکتا ہے .. یا پھر جائے تد-فین کے اوپر سے گزرنے والا کوئی پرندہ جس کی صورت شیشے سے منعکس ہو گئی یا پھر ہو سکتا ہے کہ م-یت کا ایک ہاتھ سینے پر دوسرے ہاتھ کے اوپر رکھا ہوا ہو اور قبر میں تابوت اتارتے ہوئے وہ لڑھک کر حرکت میں آ گیا ہو۔

Sharing is caring!

Categories

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *