خواجہ آصف اور آصف زرداری تنازعہ! لیگی رہنماء کا بڑا اعلان، پیپلز پارٹی کو ہلا کر رکھ دیا

اسلام آباد (نیوز ڈیسک ) اردو ٹی وی مسلم لیگ ن کے رہنما خواجہ آصف نے کہا ہے کہ مجھے میری پارٹی کے قائد نوازشریف کی طرف سے آصف زرداری سے متعلق موضوع پر بات کرنے سے منع کیا گیا ہے ، جب بھی مجھے بولنے کی اجازت ہوگی تواس پر کھل کر بات کروں گا ۔

تفصیلات کے مطابق نجی ٹی وی چینل سے گفتگو میں انہوں نے کہا کہ مسلم لیگ ن کے قائد سابق وزیراعظم نوازشریف کی طرف سے آصف زرداری یا پیپلزپارٹی سے متعلق بات کرنے سے منع کیا گیا ہے ، جب بھی مجھے اپنی پارٹی قائد کی طرف سے آصف زرداری یا پیپلزپارٹی سے متعلق بات کرنے کی اجازت ہو گی تو اس موضوع پر کھل کر بات کروں گا ۔سابق وفاقی وزیر نے کہا کہ حکومت کا اختتام شروع ہو چکا ہے ، حکومت کی جانب سے گرفتاریاں شکست کا اعتراف ہو گا ، جب کہ حکومت ایک وارداتی کے ذریعے ہمارے خلاف مقدمات بنا رہی ہے ، عمران خان کو اگر ایف آئی آر کا علم نہیں تو پھر ان کی دماغی صلاحیت پر بڑا سوالیہ نشان ہے۔انہوں نے کہا کہ سرکاری ملازمین بھی حکومت کے خلاف احتجاج کررہے ہیں ، دوسری طرف سب سے زیادہ کرپٹ آدمی اس وقت کابینہ میں بیٹھے ہیں ، ایک چھت تلے اس سے زیادہ کرپٹ لوگ آپ کو کہیں نہیں ملیں گے ، اس حکومت کے ساتھ مفاہمت کی بات نہ کبھی شہبازشریف نے کی نہ ہی ہم نے کی ، ہماری شناخت پاکستان ہے اور ہمیں کسی سے سرٹیفکیٹ لینے کی ضرورت نہیں ہے۔یاد رہے کہ اس سے قبل پاکستان مسلم لیگ ن کے رہنما خواجہ آصف نے پیپلز پارٹی کے شریک چئیرمین آصف علی زرداری سے متعلق دئیے گئے بیان پر معذرت کر لی تھی ، مسلم لیگ(ن) کے مرکزی رہنماء خواجہ آصف کا کہنا تھا کہ مجھے آج بھی آصف زرداری پر تحفظات ہیں، آصف علی زرداری کےبارے میں میری رائے تبدیل نہیں ہوئی،میں بار بار کہوں گا کہ مجھے آصف زرداری پر یقین نہیں ہے، تاہم بعد ازاں خواجہ آصف نے ایک بیان میں وضاحت دیتے ہوئے کہا کہ سابق صدر آصف علی زرداری سے متعلق میرا بیان سیاق و سباق سے الگ تھا ، میرے بیان سے اگر ان کی دل آزاری ہوئی تو میں معذرت خواجہ ہوں۔

Sharing is caring!

Categories

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *