بریکنگ نیوز: تنخواہوں اور پینشن میں اضافہ ،سرکاری ملازمین کو بڑی خوشخبری سنا دی گئ

لاہور(ویب ڈیسک)سول ایوی ایشن ملازمین کے لیے اچھی خبری ہے کہ تنخواہوں اور پینشن میں اضافے کے لیے کمیٹی قائم کردی گئی ہے۔تفصیلات کے مطابق سی اے اے نے ملازمین کی تنخواہوں اور پینشن میں اضافے کے لیے کمیٹی قائم کردی۔ تنخواہوں اور پینشن میں اضافہ پر ڈائیریکٹر اور ایچ آر ملک مظہر کی سربراہی میں 6

رکنی کمیٹی کام کرے گی۔چھ رکنی کمیٹی ملازمین کی تنخواہوں اور پینشن میں اضافے کے لیے اپنی سفارشات 15 روز میں پیش کرے گی۔سی اے اے سروس ریگولیشن 2014 تا 2019 کے معالی معاملات کا جائزہ بھی لے گی۔کمیٹی کی سفارشات کی روشنی میں تنخواہوں اور پنشن میں اضافے کا امکان ہے۔کمیٹی میں ڈائیریکٹر فنانس شاہد علی ، ایڈیشنل ڈائیریکٹر آمین احمد ، طاہر محمود، محمد بھٹی ،حسن منصور شامل ہیں۔ جبکہ دوسری جانب ایک خبر کے مطابق معاون خصوصی احتساب شہزاد اکبر نے کہا ہے کہ شہبازشریف نیب تحویل میں آج کل بڑی خفیہ ملاقاتیں کر رہے ہیں، شہبازشریف کے کاروبار کا ابھی فرانزک ہونا ہے، وہ ذہنی دباؤ کا شکار ہیں، اور عدالت میں ڈرامے بازی کرتے ہیں۔ انہوں نے پریس کانفرنس میں کہا کہ ان کو معلوم ہے کہ شہبازشریف نیب تحویل میں ہیں، لیکن نیب تحویل میں وہ بڑی خفیہ ملاقاتیں کررہے ہیں۔نیب کو شہبازشریف کی کرپشن کا ایک اور ریفرنس موصول ہوا ہے۔ نیب انکوائری میں رمضان شوگر ملز اور العربیہ شوگر ملز کے 10 سالہ ریکارڈ کا معائنہ کیا گیا ہے۔ معائنے میں حیران کن انکشافات ہوئے ہیں۔ رمضان شوگر ملز اور العربیہ شوگر ملز کے کم آمدنی والے ملازمین کے ناموں پر بھی بےنامی اکاؤنٹس بنائے گئے ہیں۔شہزاد اکبر نے کہا کہ شہباز شریف سے 18 سوال پوچھے تھے لیکن انہوں نے جواب نہیں دیا۔ آج کل تو شہبازشریف نیب کی تحویل میں مکمل فارغ ہیں۔ اس لیے 3 سوالوں کے جواب دے دیں کہ کیا آپ مسرور انور اور شعیب قمر کو نہیں جانتے؟ یہ دونوں نیب کی حراست میں ہیں۔ 25 ہزار روپے کے ملازم ہیں، جبکہ ان کے اکاؤنٹس سے اربوں روپے کی ٹرانزیکشن کی گئی۔ اسی طرح آپ خادم اعلیٰ تھے تو آپ کو ہر چیز کا علم ہوتا تھا لیکن کیا کاروبار کا علم نہیں تھا؟ آپ کے پاس کوئی ذرائع آمدن نہیں لیکن آپ نے لندن کے4 فلیٹس کیسے لیے؟ انہوں نے کہا کہ شہبازشریف نیب تحویل میں آج کل بڑی خفیہ ملاقاتیں کر رہے ہیں، شہبازشریف کے کاروبار کا ابھی فرانزک ہونا ہے، وہ ذہنی دباؤ کا شکار ہیں، اور عدالت میں ڈرامے بازی کرتے ہیں۔

Sharing is caring!

Categories

Comments are closed.