گیم الٹی چل پڑی

لاہور (ویب ڈیسک) مسلم لیگ ن کے رہنما سابق وفاقی وزیر خواجہ سعد رفیق کے خلاف نیب لاہور نے ریلوے اراضی لیز پر دینے کی انکوائری بند کرنے کا فیصلہ کرلیا ۔ اس حوالے سے تفصیلات میں بتایا گیا ہے کہ ڈی جی نیب لاہور نے اس سلسلے میں سفارشات حتمی منظوری کے لیے چیئرمین نیب کو بھیج دی ہیں

، جن میں کہا گیا ہے کہ خواجہ سعد رفیق پر ریلوے کی زمین من پسند افراد کو سستے داموں لیز پر دینے کا الزام تھا، ریلوے نے جس کمپنی کو زمین لیز پر دی گئی انہوں سے سب سے زیادہ بولی لگائی ، خواجہ سعد رفیق پر جو الزام لگایا گیا کہ انہوں نے من پسند افراد کو زمین ٹھیکے پر دی وہ ثابت نہیں ہوتا ، 12 پلاٹس پاکستان کے مختلف ضلعوں میں آئل کی کمپنیوں کو میرٹ پر دیئے گیے ۔جب کہ سابق وفاقی وزیر خواجہ سعد رفیق کے خلاف شکایت دہندہ نے الزام عائد کیا تھا کہ انہوں نے لاہور والٹن روڈ اور یو ای ٹی پر اراضی 33 سال کے لیے لیز پر دلوائی ، جہاں سعد رفیق کی طرف سے ریڈمکو کے ذریعے یہ زمین من پسند کنٹیکرٹر کو فائدہ پہنچانے کے لیے دی گئی ۔دوسری طرف لاہور کی احتساب عدالت نے مسلم لیگ (ن) کے رہنمائوں خواجہ سعد رفیق اور خواجہ سلمان رفیق کیخلاف پیراگون ہائو سنگ سوسائٹی ریفرنس کیس کی سماعت 14 اکتوبر تک ملتوی کرتے ہوئے نیب کے گواہان کو بیان قلمبند کروانے کیلئے طلب کر لیا ۔احتساب عدالت کے جج جواد الاحسن نے کیس کی سماعت کی ، عدالتی حکم پر سابق وفاقی وزیر ریلوے خواجہ سعد رفیق اور سابق صوبائی وزیر خواجہ سلمان رفیق پیش ہوئے جب کہ وعدہ معاف گواہ قیصر امین بٹ طبیعت ناساز ہونے کے باعث بیان ریکارڈ نہ کروا سکے ، ایم ایس سروسز ہسپتال نے قیصر امین بٹ کی میڈیکل رپورٹ عدالت میں جمع کروائی ، دوران سماعت ریفرنس کے گواہ پٹواری عبدالغفور کا بیان ریکارڈ کیا گیا ، عدالت کے روبروپیراگون ہاو ٴسنگ سوسائٹی ریفرنس کیس میں اب تک 7 گواہان اپنے بیانات قلمبند کروا چکے ہیں ، جب کہ خواجہ برادران کے خلاف مجموعی طور پر 130 گواہان بیان قلمبند کروائیں گے۔

Sharing is caring!

Categories

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *