وہی ہوا جس کا ڈر تھا ۔۔۔۔اسلام آباد کے مختلف علاقے سیل کرنے کا حکم

اسلام آباد (ویب ڈیسک)وفاقی دارالحکومت میں کورونا کیسز میں اضافہ پر ڈی ایچ او نے مخصوص علاقوں میں اسمارٹ لاک ڈاؤن کی تجویز دے دی۔وزارت قومی صحت نے اسلام آباد کی مختلف گلیاں سیل کرنےکی ہدایت کر دی۔ اس متعلق ڈسٹرکٹ ہیلتھ آفیسراسلام آباد نےڈپٹی کمشنر کو مراسلہ ارسال کر دیا ہے۔ڈی ایچ او کے مطابق اسلام آباد

لے مختلف سیکٹرز میں کوروناکی سرویلنس جاری ہے، مختلف سیکٹرز کی بعض گلیوں میں کوروناکیسزسامنےآئےہیں، سیکٹرجی ٹین فور،جی نائن فور،آئی ایٹ ٹومیں کیس سامنےآئےہیں۔ڈی ایچ او کا کہنا ہے کہ متاثرہ سیکٹرزمیں کوروناٹیسٹ کیلئےسیمپلنگ جاری ہے، جی نائن فور،جی ٹین فور،آئی ایٹ، جی ٹین فورکی38،44،45،46،47اور48گلیوں کوسیل کیاجائے، سیکٹرآئی ایٹ ٹوکی گلیاں 25،29، سیکٹرجی نائن فور کی85، 89گلیاں سیل کی جائیں۔ڈی ایچ اواسلام آباد کا کہنا ہے کہ بروقت لاک ڈاؤن سےکوروناکےپھیلاؤمیں کمی ممکن ہے۔جبکہ دوسری جانب ایک خبر کے مطابق حکومت پنجاب نے اسموگ کو آفت قرار دے کر اسموگ مانیٹرنگ سیل قائم کر دیا جب کہ اسموگ پر قابو پانے کے لیے دھواں چھوڑنے والی گاڑیوں کو 200 روپے کے بجائے 2 ہزار روپے جرمانہ کیا جائے گا۔پنجاب ڈیزاسٹر مینجمنٹ اتھارٹی کے دفتر میں قائم کیے گئے اسموگ مانیٹرنگ سیل میں سپارکو کی مدد سے سیٹلائیٹ امیج کے ذریعے فصلوں کی باقیات جلانے والوں کی نشاندہی کی جائے گی اور ذمہ داروں کے خلاف متعلقہ ڈپٹی کمشنر سخت کارروائی کریں گے۔ پنجاب ڈیزاسٹر مینجمنٹ اتھارٹی کے حکام کا کہنا ہےکہ فضائی آلودگی کا سبب بننے والے کارخانوں کے مالکان کے خلاف مقدمہ درج ہوگا جب کہ دھوں چھوڑنے والی گاڑیوں کے مالکان کو 200 روپے کے بجائے 2000 روپے جرمانہ کیا جائے گا۔حکام نے کہا کہ صاف ہوا کی فراہمی یقینی بنانے کیلئے پنجاب میں اینٹوں کے بھٹے نومبر کے پہلے ہفتے بند کر دیئے جائیں گے، اسموگ پیدا کرنے کے ذمہ دار افراد کے خلاف نہ صرف مقدمات درج ہوں گے بلکہ انہیں گرفتار کرکے سخت سزائیں بھی دی جائیں گی۔

Sharing is caring!

Categories

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *