بریکنگ نیوز : عدالت عظمیٰ نے انتخابات میں دھاندلی ثابت ہونے پر اسمبلیاں تحلیل کر نے کاحکم جاری کر دیا ، احتجای مظاہرے پھوٹ پڑے

بشکیک (ویب ڈیسک)کرغیزستان کے عام انتخابات میں دھاندلی پر مشتعل عوام نے پیر کی شب پارلیمنٹ ہاؤس اور ایوان صدر میں گھس کر توڑ پھوڑ کی جس کے باعث الیکشن کمیشن نے انتخابات کے نتائج کو کالعدم قرار دے دیا ہے۔عالمی خبر رساں اداروں کے مطابق کرغزستان کے الیکشن کمیشن نے دارالحکومت

بشکیک اور دیگر شہروں میں بڑے پیمانےپر مظاہروں کے بعد پارلیمانی انتخابات کے نتائج کو غیر قانونی قرار دے دیا ہے۔حزب اختلاف کے حامیوں نے گزشتہ رات سرکاری عمارتوں پر قبضہ کرکے سابق صدر کو جیل سے رہا کروایا اور نئے انتخابات کا مطالبہ کیا۔ اس دوران پولیس اور دیگر فورسز کے ساتھ جھڑپوں میں سیکڑوں افراد زخمی ہوئے اور ایک شخص دم توڑ گیا۔الیکشن کمیشن کے سربراہ نورزاں شیلڈ کا کہنا ہے کہ انتخابی نتائج کو غیرقانونی قرار دینے کا فیصلہ فیصلہ ملک کو مزید کشیدگی سے بچانے کے لئے کیا گیا۔کمیشن کے اعلان سے قبل مبینہ دھاندلی سے منتخب ہونے والے صدر سورون بائی جین بیکوف نے الزام عائد کیا تھا کہ بعض سیاسی قوتیں غیر قانونی طور پر اقتدار پر قبضہ کرنا چاہتے ہیں۔ انہوں اپوزیشن پر زور دیا کہ لوگوں کو سڑکوں سے ہٹائیں۔پارلیمانی انتخابات کے ابتدائی نتائج کا اعلان اتوار کو کیا گیا۔ اس کے بعد بشکیک اور ملک کے دوسرے شہروں میں بڑے پیمانے پر احتجاج شروع ہوگیا۔ مظاہرین نے الزام عائد کیا کہ اقتدار میں آںے والی دو جماعتوں نے ووٹوں کی خریداری کے ساتھ بڑے پیمانے پر دھاندلی کی ہے۔پولیس نے ہجوم کو منتشر کرنے کیلئے واٹر کینن، آنسوگیس اور دستی بموں کا استعمال کیا مگر سوشل میڈیا پر سامنے آنے والی ویڈیوز میں دیکھا جاسکتا ہے کہ عوام کے سمندر سے بے بس ہوکر فورسز کے اہلکار واپس بھاگ رہے ہیں۔ کرغزستان کی وزارت صحت کے مطابق پولیس سے جھڑپوں میں 590 افراد زخمی ہوئے اور ایک شخص کی موت ہوگئی

Sharing is caring!

Categories

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *