ایاز صادق کو کیا سزا دینی چاہیئے؟ سابق اسپیکر کے پُرانے حریف علیم خان بھی میدان میں آگئے، قوم کی ترجمانی کر دی

لاہور(نیوز ڈیسک )پاکستان تحریک انصاف کے رہنمااور سینئر وزیر پنجاب عبدالعلیم خان نے کہا ہے کہ بھارت نوازی اور مودی کی خوشنودی حاصل کرنے کے لئے ایاز صادق کا بیان ملک دشمنی ہی نہیں آئین سے غداری کے مترادف بھی ہے،ایسے بیانات پر اُن کے خلاف بغاوت کا مقدمہ اور عبرتناک سزا بنتی ہے،اپنی

پریس کانفرنس میں ایاز صادق کی کی گئی وضاحت افسوسناک اور ”عذر گناہ،بد تر از گناہ“کے مترادف ہے جسے غیور عوام ہر گز قبول نہیں کریں گے۔تفصیلات کے مطابق عام اور ضمنی انتخابات میں لاہور کے حلقے این اے 129 سے سردار ایاز صادق کے مقابلے میں اترنے والے تحریک انصاف کے رہنما اور سینئر وزیر پنجاب عبدالعلیم خان کا کہنا تھا کہ پاکستان کی بہادر افواج کے ہاتھوں ہونے والی عبرتناک شکست اور جگ ہنسائی پر کل تک دنیا سے منہ چھپانے والا مودی ”ایاز میر صادق“کے بیانات کے بعد خوشیاں منا رہا ہے،ثابت ہو گیا ہے کہ ایاز صادق کے ہوتے ہوئے میر جعفر اور میر صادق جیسے غداروں کی ضرورت نہیں۔عبدالعلیم خان نے کہا کہ اپنے بیان پر قوم سے معافی مانگنے کی بجائے ایاز صادق کی ڈھٹائی بے غیرتی کی حد تک پہنچ گئی ہے،قوم ایسے عناصر کا اصل چہرہ پہچان چکی ہے اور وہ ان ملک دشمنوں کی وضاحت کسی صورت قبول نہیں کریں گے۔عبدالعلیم خان نے مزید کہا کہ ایاز صادق اور اُس کی پارٹی اقتدار کے لئے کسی بھی حد تک جا سکتی ہے لیکن کوئی کسی بھول میں نہ رہے، پاکستان سے محبت ہم سب کے ایمان کا حصہ ہے اور اسی طرح اپنی نڈر افواج کی قدر بھی پاکستانیوں کے دل میں کوٹ کوٹ کر بھری ہے اور ان جوانوں پر بچہ بچہ اپنی جانیں نچھاور کرتا ہے۔انہوں نے کہا کہ نواز لیگیوں کو بھارت نوازی اور مودی کی خوشنودی بہت مہنگی پڑے گی، ایاز صادق عوام کے رد عمل سے ڈریں انہیں کہیں پناہ نہیں ملے گی۔عبدالعلیم خان نے مزید کہا کہ اقتدار کی ہوس میں ایاز صادق اور اُن کی پارٹی ملک بیچنے تک جا سکتے ہیں اسی لیے آج ہر پاکستانی یہ مطالبہ کر رہا ہے کہ ملک اور فوج دشمن بیانات پر ایاز صادق کے خلاف بغاوت کا مقدمہ درج کیا جائے اور اسے قرار واقعی سزا دی جائے۔

Sharing is caring!

Categories

Comments are closed.