پاکستانیوں کے لیے زبردست خوشخبری! یکم اکتوبر سے پاکستان میں پٹرول کی قیمت کتنی کم ہونے والی ہے؟ شاندار خبر

اسلام آباد (نیوز ڈیسک ) اوگرا نے یکم اکتوبر سے پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں کمی سمری تیار کرلی، پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں 3 سے 4 روپے فی لیٹر کمی کا امکان ہے، وزیراعظم کی منظوری کے بعد وزارت خزانہ پٹرولیم مصنوعات کی قیمتیں کم یا برقرار رکھنے سے متعلق کل اعلان کرے گی۔

ذرائع کے مطابق پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں سے متعلق ورکنگ تیارکر لی ہے۔یکم اکتوبر سے پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں کمی کی جائے گی یا نہیں اس کا اعلان کل کیا جائے گا۔ اوگرا نے پٹرول اور ڈیزل کی قیمتوں میں کمی کیلئے سفارشات وزارت پٹرولیم کو بھجوا دی ہیں۔اوگرا نے یکم اکتوبرکو حکومت سے پٹرول اور ڈیز ل کی قیمتوں میں فی لیٹر 2 روپے کمی کی تجویز دے دی ہے۔ اوگرا نے اپنی سمری میں بتایا کہ عالمی منڈی میں خام تیل کی قیمتوں میں کمی ہوئی ہے۔جس کے پیش نظر پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں 3 سے 4 روپے فی لیٹر کمی کی تجویز دی ہے۔ سمری میں یہ تجویز بھی دی گئی ہے کہ پٹرولیم لیوی کی شرح بڑھا کر قیمتیں برقرار بھی رکھی جاسکتی ہیں۔بتایا گیا ہے کہ پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں کمی یا برقرار رکھنے کا حتمی فیصلہ وزیراعظم عمران خان کی مشاورت سے کیا جائے گا۔ وزیراعظم کی ہدایت کے بعد وزارت خزانہ پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں سے متعلق اعلان کرے گی۔ دوسری جانب پٹرول کی بڑھتی ہوئی در آمد کے باوجود گزشتہ ماہ اگست کے دوران پٹرول کی کھپت میں6 فیصد کی کمی ریکارڈ کی گئی جب کہ ڈیزل کی کھپت بھی27 فیصد تک گر گئی۔ انڈسٹری ذرائع کے مطابق گزشتہ ماہ پٹرول کی کھپت 6 فیصد کمی سے 7لاکھ 10ہزار ٹن سے زائد رہی جبکہ جولائی میں پٹرول کی کھپت 7 لاکھ57 ہزار ٹن سے زائد کی سطح پر تھی۔ انڈسٹری ذرائع کے مطابق اگست میں کراچی سمیت ملک کے بیشتر علاقوں میں طوفانی بارشوں کے نتیجے میں ٹرانسپورٹ سیکٹر میں پٹرول کی کھپت میں کمی رہی۔گزشتہ ماہ ڈیزل کی کھپت بھی27 فیصد کی کمی سے 5 لاکھ 24 ہزار ٹن سے زائد رہی جبکہ جولائی میں ڈیزل کی کھپت 7لاکھ 14ہزار ٹن کے لگ بھگ رہی تھی۔ اگست میں فرنس آئل کی کھپت معمولی اضافے سے 3 لاکھ 27 ہزار ٹن رہی، طیاروں میں استعمال ہونے والے ایندھن جیٹ فیول ون اور ایٹ کی کھپت11فیصد کی کمی سے 30 ہزار ٹن سے زائد رہی جبکہ جولائی میں جیٹ فیول کی کھپت 34 ہزار ٹن سے زائد ریکارڈ کی گئی تھی۔ مٹی کے تیل کی کھپت گزشتہ ماہ 48 فیصد اضافے سے 7300 ٹن رہی جبکہ جولائی میں مٹی کے تیل کی کھپت 4944 ٹن رہی تھی۔ لائٹ ڈیزل آئل کی کھپت اگست میں5 فیصد کی کمی سے 1429ٹن رہی، ہائی اوکٹین کی کھپت میں اضافے کا رجحان جاری ہے اور اگست میں57فیصد اضافے سے 14ہزار ٹن کے لگ بھگ ہائی اوکٹین استعمال کیا گیا۔

Sharing is caring!

Categories

Comments are closed.